وائرس کے دوران غریبوں سے ناروا سلوک ہورہا ہے،شاہدہ منی

وائرس کے دوران غریبوں سے ناروا سلوک ہورہا ہے،شاہدہ منی

  

لاہور(فلم رپورٹر)میلوڈی کوئین آف ایشیاء پرائڈ آف پرفارمنس گلوکارہ شاہدہ منی نے کہا کہ کرونا وائرس کے دوران غریبوں کے ساتھ ناروا سلو ک ہوا۔اس کی جتنی مذمت کی جائے وہ کم ہے۔کرونا وائرس کے دوران چھوٹے فنکار اور تکنیک کار جس تکلیف اور پریشانی سے گذ رہے ہیں وہ نا قابل بیان ہے۔صرف 13سوفنکاروں کی مالی امداد کافی نہیں ہے باقی فنکاروں کیلئے حکومت کو اقدامات کرنا ہوں گے میں تو یہ کہتی ہوں کہ جو جو لوگ غریبوں کو راشن دیتے وقت تصاویر بنوا کر شہرت کی خاطر سوشل میڈیا پر وائرل کرنا ٹھیک نہیں ہے۔ شاہدہ منی نے کہا ہے کہ غریب کی عزت نفس کو مجروح کرنے کاکسی کو حق نہیں ہے۔

رے ملک میں ٹیلنٹ کی کوئی کمی نہیں ہے اس کو صلاحیت کے اظہار کا مناسب موقع نہیں ملتا۔ کلاسیکل اور پاپ میوزک کے جدید دور میں بھی پاکستانی عوام ہمیشہ اچھا میوزک سننے کے لئے بے چین رہتے ہیں میں ہمیشہ اپنی موسیقی کے ذریعے ثقافت کو نمایاں کرتی ہوں،اگر موجودہ دور کی مناسبت سے میوزک کو تیار کیا جائے تو آج بھی لوگ ہمیشہ اچھا میوزک سننے کے لئے بیتاب رہتے ہیں۔شاہدہ منی نے کہا کہ میں سمجھتی ہوں کہ کسی بھی میوزک کی کامیابی اس وقت تک ممکن نہیں ہو سکتی ہے جب تک اس میوزک میں گانے والے کے اپنے کلچر کا رنگ دکھائی نہ دے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے ہمیشہ یہ کوشش کی ہے کہ ایسے گیت تیار کروں جن میں ہمارے کلچر اور ثقافت کا رنگ نمایاں ہو۔

مزید :

کلچر -