20کلو آٹے کا تھیلہ بیس روپے مہنگا،فلور ملز مالکان کا انتظامیہ اور محکمہ خوراک کے چھاپوں کیخلاف ہڑتال کا اعلان

  20کلو آٹے کا تھیلہ بیس روپے مہنگا،فلور ملز مالکان کا انتظامیہ اور محکمہ ...

  

لاہور(لیڈی رپورٹر،نیوز ایجنسیاں) فلور ملز مالکان نے از خود گندم کے ریٹ بڑھا دئیے۔ گندم کی قیمت میں 55 روپے فی من اضافہ کردیا گیا۔گندم کی نئی قیمت 1480 روپے مقرر کردی گئی۔ 20 کلو آٹے کا تھیلا 20 روپے مہنگا ہوگیا نئی قیمت 825 روپے ہو گئی۔ اس حوالے سے ڈائریکٹر فوڈ واجد علی شاہ کا کہنا تھا کہ آٹے کا سرکاری طور پر کوئی ریٹ نہیں بڑھایا، فلو ملز نے خود ساختہ ریٹس بڑھائے جو قابل تشویش ہیں۔ادھرفلورملزایسوسی ایشن نے ضلعی انتظامیہ اور محکمہ خوراک کی جانب سے فلور ملوں میں چھاپوں کیخلاف ہڑتال کا اعلان کر دیا۔پاکستان فلورملزایسوسی ایشن کے چیئرمین عاصم رضا احمد نے پنجاب کے چیئرمین عبدالرؤف مختار کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ صورتحال میں کاروبار کرنا محال ہو گیا ہے اس لئے پنجاب کی تمام فلور ملیں بند کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔محکمہ خوراک نے 72 گھنٹے پسائی کیلئے گندم مل میں رکھنے کی اجازت دی تھی لیکن فلورملز کے پاس 48 گھنٹے کی گندم بھی موجود نہیں۔انتظامیہ گندم خریداری میں بدترین ناکامی کے بعد اب ملز میں موجود گندم جبری طور پر اٹھا رہی ہے۔ محکمہ خوراک نے فلور ملوں پر اوپن مارکیٹ سے گندم خریدنے پر بھی پابندی لگا رکھی ہے۔کاروبار کرتے ہیں مگر عزت نفس پر کوئی سمجھوتہ قبول نہیں کریں گے۔ محکمہ خوراک کی ناقص پالیسیوں کے باعث ملیں بند کرنے ہر مجبور ہو گئے ہیں۔محکمہ خوراک نے فلور ملز کو گندم کی خریداری نہیں کر دی اور جو سٹاک ملوں کو چاہیے وہ بھی نہیں دیا جا رہا۔حکومت گندم کی خریداری کا ہدف پورا نہیں کر سکی اور فلور ملز کی گندم کو زبردستی قبضے میں لیا جا رہا ہے۔فلور مل مالکان حکومت کو ٹیکس ادا کرتے ہیں،غلہ منڈیوں میں گندم کی قیمت میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے ایسے میں مہنگی گندم خرید کر سستا آٹا کیسے فروخت کریں۔جب تک مطالبات تسلیم نہیں ہوں گے ملیں نہیں چلائیں گے۔انہوں نے کہا کہ ملیں بند ہونے سے آٹے کی قلت پیدا ہوگی جس کی تمام تر ذمہ داری حکومت پر عائد ہوگی۔

ہڑتال کا اعلان

مزید :

صفحہ اول -