ق لیگ سمیت تمام اتحادی حکومت کے ساتھ ہیں:چودھری سرور

ق لیگ سمیت تمام اتحادی حکومت کے ساتھ ہیں:چودھری سرور

  

لاہور،فیصل آباد،پیر محل(نمائندہ خصوصی، سپیشل رپورٹر،نمائندہ پاکستان)گورنر پنجاب چودھری سرور نے کہا ہے کہ ق لیگ سمیت تمام اتحادی حکومت کے ساتھ ہیں اور حکومت بھی تمام فیصلوں میں اتحادیوں سے مشاورت کرتی ہے۔ نیب سمیت کسی ادارے میں حکومتی مداخلت نہیں احتساب کے تمام ادارے فیصلے کرنے میں آزاد ہیں۔ مارکیٹوں کو کھولنے کی اجازت دینے اور لاک ڈاؤن میں نرمی کا مقصد معاشی مسائل میں کمی لانا ہے اس کا مطلب یہ نہیں کہ کورونا ختم ہو چکا ہے۔ پنجاب ڈیویلپمنٹ نیٹ ورک کے تحت اب تک ساڑھے سات لاکھ غریب خاندانوں میں راشن فراہم کر چکے ہیں اور یہ سلسلہ اب بھی جاری ہے۔ وہ گزشتہ روز ابواء ہسپتال میں کورونا ٹیسٹنگ لیب کا افتتاح اور کمالیہ سے تحریک انصاف کے ایم این اے ریاض فتیانہ کو غریب خاندانوں کے لئے سرور فاؤنڈیشن کی جانب سے راشن کی تقسیم کے بعد میڈیا سے گفتگو کررہے تھے۔ اس موقع پر تحریک انصاف کے ایم، این ا ے ریاض فتیانہ، سرور فاؤنڈیشن کی چیئر پرسن بیگم پروین سرور، ابواء ہسپتال کے ایم ڈی خرم افتخار، بزنس کمیونٹی سے جنید سبحانی، وائس چیئر مین اوورسیز کمیشن پنجاب محمد وسیم رامے اور دیگر بھی موجود تھے۔ بعدازاں گورنر پنجاب نے پیرمحل میں سرور فاؤنڈیشن پبلک سکول میں مستحقین میں راشن تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف حکومت نے غریب عوام کیلئے ملکی تاریخ کا سب سے بڑا ریلیف پیکج دیا ہے۔وزیراعظم کی زیر نگرانی کورونا وائرس سے متاثرہ خاندانوں کو امداد فراہمی کا مشن شفاف انداز سے میرٹ پر جاری ہے۔پیرمحل اور ضلع کی دیگر تحصیلیں مجھے بہت عزیز ہیں مسائل کو حل کرنے کیلئے بطور گورنر اپنی تمام کاوشیں بروئے کار لاؤں گا۔گورنر چوہدری محمد سرور نے تقریب کے اختتام میں ڈاکٹرز، نرسزاور ڈپٹی کمشنر ٹوبہ ٹیک سنگھ آمنہ منیر،ڈی پی او وقار شعیب قریشی میں شیلڈزاور تحائف بھی تقسیم کئے۔دورہ پیرمحل کے بعد گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے ابوا ہسپتال کھرڑیانوالہ میں کورونا تشخیصی لیب کا افتتاح بھی کیا۔ہسپتال میں نجی شعبہ میں پچاس فیصد رعایتی نرخوں جبکہ مستحق مریضوں کو کورونا کی جانچ کے لئے ٹیسٹ کی سہولت بلامعاوضہ دی جائیگی۔ لیب کی روزانہ 400 ٹیسٹ کرنے کی استعداد ہوگی۔اس موقع پر ڈویژنل کمشنر عشرت علی،ڈپٹی کمشنر محمد علی،اسسٹنٹ کمشنر سٹی سید ایوب بخاری،سرپرست ہسپتال خرم افتخار کے علاوہ دیگر عہدیداران بھی موجود تھے

گورنر پنجاب

مزید :

صفحہ آخر -