ٹڈی دل کی مختلف علاقوں پر یلغار، فصلوں، آ م باغا ت کا صفایا: انتظامیہ غائب کسانوں کا احتجاج

ٹڈی دل کی مختلف علاقوں پر یلغار، فصلوں، آ م باغا ت کا صفایا: انتظامیہ غائب ...

  

مظفرگڑھ، چوک اعظم، چوک سرور شہید، خانیوال، کبیروالا، کوٹ ادو، اوچشریف، بہاولپور، میاں چنوں، محسن وال (نامہ نگار، ڈسٹرکٹ رپورٹر، نمائندگان پاکستان، سٹی رپورٹر، تحصیل رپورٹر) مظفر گڑھ ضلع کے مختلف علاقوں میں ٹڈی دل کی یلغار سے تباہی ہوگئی آل پاکستان کسان اتحاد کا مظفرگڑھ کو آفت زدہ علاقہ قرار دینے کا مطالبہ, تفصیل کے مطابق بلوچستان سے راجن پور اور ڈیرہ غازی خان کے راستے سے مظفرگڑھ میں آنے والے ٹڈی دل نے ضلع کے طول و عرض میں تباھی مچادی مظفرگڑھ کی چاروں تحصیلوں کوٹ ادو،مظفرگڑھ،جتوئی اور علی پور کے سینکڑوں دیہاتوں میں (بقیہ نمبر9صفحہ6پر)

کروڑوں ٹدیوں پر مشتمل جھنڈ نے فصلوں،درختوں اور آموں کے باغات کا صفایا کر دیا محکمہ زراعت کے زرائع کے مطابق ٹدیوں کے جھنڈ کی لمبائی 10 کلومیٹر اور چوڑائی 3 کلو میٹر تھی مقامی کاشتکاروں کے مطابق ٹڈی دل جہاں سے گزرتا دن میں بھی تاریکی چھا جاتی تھی.آل پاکستان کسان اتحاد کے راہنماؤں رانا امجد علی امجد ایڈووکیٹ, حاجی اختر سکھیرا, قاضی سرفراز حسین, خان گڑھ کے مختلف مواضعات سے تعلق رکھنے والے زمینداروں لیاقت علی ملک ایڈووکیٹ سابق چیئرمین بلدیہ مظفرگڑھ،نواب شہباز خان ایڈووکیٹ،نواب فرید خان شیروانی ایڈووکیٹ ملک غضنفر بھٹی,میاں منظور حسین بھٹی اور متعدد دیگر نے بتایا کہ ٹڈی دل نے سبز چارے برسیم، جوار اور کپاس کی فصل کو شدید نقصان پہنچایا, شیشم کے درختوں کے پتے چٹ کر گئے, آم کے درختوں پر موسم بہار میں نکلنے والی نئی نرم و نازک کونپلوں کا بھی صفایا کر دیا.انھوں نے کہا کہ حالیہ بے وقت کی شدید بارشوں اور ڑالہ باریوں کی وجہ سے آم کے درختوں پر بور بہت کم لگا تھا گزشتہ سال کے مقابلے میں 1/5 حصہ کم بور لگا تھا رھی سہی کسر ٹڈی دل نے پوری کر دی ھے انھوں نے بتایا کہ بارشوں اور ڑالہ باریوں کی وجہ سے گندم کی پیداوار 20، 25 من فی ایکڑ ھوئی ھے جو گزشتہ سالوں میں 50،60 من فی ایکڑ ھوا کرتی تھی اب کپاس اور جوار کی فصلات ٹدی دل نے تباہ کر دی ھیں انھوں نے کہا پورے ضلع مظفرگڑھ کے تمام کاشتکاروں کو انھیں حالات کا سامنا ھے انھوں نے کہا کہ ضلع مظفرگڑھ کے کسانوں کی کمر ٹوٹ چکی ھے انھوں نے مطالبہ کیا کہ ضلع مظفرگڑھ کو آفت زدہ علاقہ قرار دے کر کسانوں کیلئے ریلیف پیکج کا اعلان کیا جائے۔تحصیل چوبارہ تھل کے علاقے میں قدرتی آفات ڑالہ باری۔ٹڈی دل سے تیار فصلیں تباہ ہو گئیں مسلم لیگ ن حلقہ پی پی 282 کے ٹکٹ ہولڈر الحاج ملک ریاض گرواں نے حالیہ قدرتی آفات کے ذریعے تھل میں متاثر ھونے والے علاقہ کیکسانوں کی آواز حکومتی ایوانوں میں درپیش مسائل کے زالے کی تکمیل پرکیاانہوں نے کہاحالیہ آفتوں سے تھل کے کسان غیر محفوظ ھوچکے ہیں ملک کی پسماندہ ترین تحصیل چوبارہ جہاں پہلے ہی عوام کاروبار معاشی نظام مویشی پال اور سال بھر میں چنے کی فصل پر انحصار ھوتا ھے یا پھر دیہاڑی پرمزدوری پر اپنا روزبسر چلاتے حالیہ قدرتی آفات ٹڈی دل نیجس طرح ملک بھر میں تباہی مچاہی ہوئی ہے اسی طرح تحصیل چوبارہ کے کسانوں کا ستیاناس ھوچکا ھے اور حکومتی سطح صرف سروے اور درخواست گزاری کالولی پاپ دے کر نیلی بتی کے پیچھے لگانے کے مترادف ھے اس کا کوئی موثراقدامات حل نہیں کیئے جا رہے۔ دو روز قبل ٹڈی دل نے چوک سرورشہید اور گردونواح کے چکوک میں تباہی مچائی تھی۔ اور پھر اڑکر مظفرگڑھ کی جانب روانہ ہوگئی تھی۔ لیکن دو روز بعد دوبارہ اس نے چوک سرورشہید اور گردو نوا ح کا رخ کرلیا ہے۔اور کئی درجن چکوک میں کھڑی فصلوں کپاس، لوسن، باجرا، اور دیگر سبز فصلوں کا خاتمہ کردیا ہے۔ درختوں کے پتے تک صاف کردئے گئے ہیں۔ چکوک نمبران133/Ml, 135/ML 134/ML 507/TDA 634/TDA، 635/TDA،533/TDA,، 561/TDA،چک نمبر568/TDA،چک نمبر573/TDA دیگر میں تباہی مچادی ہے، اور ان علاقوں میں کسان اپنی مدد آپ کے تحت ٹین ڈبے کھڑکا کر ٹڈی دل کو بھگانے کی ناکام کوششیں کررہے ہیں، محکمہ زراعت اور ضلعی و تحصیل انتظامیہ نے کوئی توجہ نہ کی ہے۔ محکمہ ذراعت کی غفلت و لاپرواہی پر اہلیان علاقہ نذیر احمد کلاچی بلوچ، چوہدری مشتاق احمد گورائیہ،محمد امین لائلپوری،محمد اعظم، محمد اشفاق گجر،محمد یاسر مان،چوہدری انور جٹ،بشیر احمد جھورڑ،ارشد علی،محمد شفیق واہلہ،اوردیگر نے شدید احتجاج کیا ہے اور کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت کا کام پاکستانیوں کو انصاف دینا تھا لیکن اب آفت کی اس گھڑی میں حکومت کہیں دکھائی نہیں دے رہی۔ضلعی انتظامیہ نے خانیوال کبیروالا اور میاں چنوں کے علاقوں میں ٹڈی دل کے حملہ کے بعد سرویلنس اور آپریشن کمبیٹ تیز کردیا ہے ڈپٹی کمشنر آغا ظہیر عباس شیرازی نے میاں چنوں کبیروالہ عبدالحکیم اور خانیوال کے متاثرہ علاقوں کا خود دورہ کرکے سپرے کا جائزہ لیا اور آپریشن تیز کرنے کی ہدایت کی اس موقع پر محکمہ زراعت کے افسران نے ڈپٹی کمشنر کو ٹڈی دل کے فوری تدارک کے لیے کیے جانے والے اقدامات بارے تفصیلی بریفنگ دی۔ڈپٹی کمشنر نے اس موقع پر بتایا کہ ضلعی انتظامیہ نے ٹڈی دل کے حملہ کے بعد آپریشن بروقت شروع کیا اور فصلوں کو ٹڈی دل کے نقصانات سے بچانے کے لیے ہرممکن وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں کافی حد تک ٹڈی دل کے حملوں کو سپرے کرکے ناکام بنا دیا گیا ہے اور یہ آپریشن ٹڈی دل کے مکمل تدارک جاری رہے گا ڈپٹی کمشنر نے کاشتکاروں سے اپیل کی ہے کہ وہ ٹڈی دل کے تدارک کیلئے انتظامیہ کے ساتھ ہر ممکن تعاون کریں اور جس جگہ پر بھی ٹڈی دل کا حملہ ہو فوری طور پر انتظامیہ کو آگاہ کیا جائے۔کبیروالاشہر اور نواحی علاقوں میں ٹڈی دل نے حملہ کرکے،کسانوں، شہریوں میں خو ف و ہراس، پھیلا دیا،گزشتہ روز کبیروالا شہر اور نواحی علاقوں اڈا کوٹ بہادر، بٹہ کوٹ،بارہ میل، اڈاجھلار مدینہ،نواں شہر سمیت دیگرعلاقوں میں ٹڈی دل نے فصلوں پر ہلہ بول رکھا ہے، ٹڈی دل کے حملوں سے کھڑی فصلوں کے مالک کسانوں، زمیندارشدید پریشا نی کا شکار ہو رہے ہیں مزید برآں حالیہ دنوں میں ہی علاقہ میں کپاس کی نئی فصل کی کاشت کی گئی ہے، کسان نمائندگان اور شہری، سماجی حلقوں نے حکو مت سے ٹڈی دل کے خاتمے کے لئے فوری ٹھوس اقداما ت اٹھانے کا مطالبہ کیا ہے۔لاکھوں کی تعداد میں ٹڈی دل نے اُوچ شریف و گردونواح کا رخ کرلیا،حلیم پور،دھوڑ کوٹ،بکھری،حید رپور،چناب رسول پور و دیگرعلاقوں میں کاشتکار اپنے آنکھوں کے سامنے ٹڈی دل کو دیکھ کرشدیدپریشان ہیں، کاشتکار پہلے ہی بارشوں ودیگر وجوہات کے باعث گزشتہ سال سے فصلات کی خراب ہونے اور پیداوار میں کمی کے باعث شدید اذیت میں مبتلا ہیں پہلے بارشوں سے گندم کی فصل برباد ہوئی ہے اب ٹڈی دل نے مذکورہ بالا فصلوں کو تباہ و برباد کرنے لگی ہے ٹڈی دل سے آم کے باغات،ٹماٹر،کپاس،پیاز اور دیگر فصلوں کو شدید نقصان پہنچا سکتی ہے کاشتکار اپنی مدد آپ کے تحت ڈھول اور برتن بجا کر ٹڈی کو بھگانے میں مصروف ہیں حکومت پنجاب کو چاہیے کہ ٹڈی دل کے تدراک کیلئے جلد از جلد ٹھوس اقدامات اٹھائے جوکہ نظر نہی آرہے اُوچ شریف کے کاشتکاروں نے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے مطالبہ کیا ہے کہ ضلع بہاولپور کو آفت زدہ قرار دے کر کسانوں کو مالی امداد فراہم کی جائے تاکہ اپنے بچوں کا پیٹ پال سکیں،جبکہ محکمہ زراعت توسیع اُوچ شریف کے زرعی انچارج ملک محمد ارشد نے اپنے مؤقف میں بتایا کہ محکمہ زراعت کی ٹیمیں ٹڈی دل کے تدارک کیلئے متحرک ہیں اور متاثرہ علاقوں میں اسپرے کا عمل شروع کر دیا گیا ہے۔کپاس کی فصل پرٹڈی دل نے اچانک حملہ کرکے لاکھوں ایکڑ فصل تباہ کردی محکمہ زراعت اوردیگراداروں کی تمام تدابیرناکام ٹڈی دل اچانک ڈیرہ غازیخان، راجن پور، اوچشریف، احمدپورشرقیہ سے ہوتی ہوئی بہاولپورکے علاقوں نورپورنورنگا، مسافرخانہ، خانقاہ شریف، ماڑی شیخ شجرہ، پکاباڑہ، ڈیراورواہ، تیرہ سولنگ اور ڈیرہ بکھا، لال سوہانرا کے علاقوں میں داخل ہوگئی جس جگہ ٹڈی دل کے غول زمین پراترے اورپڑاؤ ڈالہ تووہاں سے کپاس مکئی اورچارہ کی فصلیں بری طرح تباہ کردی جن سے کاشتکاروں کابھاری نقصان ہواہے ٹڈی دل کے ممکنہ حملے کے حوالے سے حکومت پنجاب کئی روز سے اقدامات کرنے اورتدارک کیلئے منصوبہ بندی قائم کررکھی تھی بلکہ محکمہ زراعت پنجاب نے تمام ملازمین ٹڈی دل کے خاتمے کے حوالے سے ملازمین نے آدھی تنخواہ اضافی طورپربطوربونس بھی جاری کی تھی لیکن ٹڈی دل نے اچانک حملہ کرکے حکومت پنجاب اورمحکمہ زراعت کے تمام منصوبے ناکام کرکے رکھ دیئے ہیں ٹڈی دل کے حملہ سے کاشتکار بھی مایوسی کاشکار ہورہے ہیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -