این ایف سی ایوارڈ کمیشن میں جاوید جبار کی نامزدگی،پیپلز پارٹی بھی میدان میں آگئی،دوٹوک اعلان کرد یا

این ایف سی ایوارڈ کمیشن میں جاوید جبار کی نامزدگی،پیپلز پارٹی بھی میدان میں ...
این ایف سی ایوارڈ کمیشن میں جاوید جبار کی نامزدگی،پیپلز پارٹی بھی میدان میں آگئی،دوٹوک اعلان کرد یا

  

کوئٹہ(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان پیپلزپارٹی بلوچستان کےصوبائی میڈیا کوآرڈینیٹر حیات خان اچکزئی نے کہا ہے کہ پارٹی کارکنان چئیرمین بلاول بھٹو زرداری کی قیادت میں متحدہے،18 ترمیم کو رول بیک کرنے کی بھرپور مخالفت کرینگے،این ایف سی ایوارڈ کمیشن میں بلوچستان کے ممبر کے لیے جاوید جبار کی نامزدگی کو مسترد کرتے ہیں۔

حیات خان اچکزئی نے کہاکہ نامزد ممبر بلوچستان سے تعلق ہی نہیں رکھتا،سلیکٹرز اورسلیکٹڈچاہےجومرضی کرلیں پیپلز پارٹی اٹھارویں آئینی ترمیم میں ردوبدل برداشت نہیں کریگی،اٹھارویں آئینی ترمیم سے،پیپلز پارٹی اور دیگر سیاسی جماعتوں نے اس آئینی ترمیم کے ذریعے بلوچ شتون سمیت چھوٹے صوبوں کو نہ صرف حقوق دیے ہیں بلکہ وفاق کو بھی مضبوط کیا ہے،اٹھارہویں آئینی ترمیم پوری قوم کا مسئلہ ہے،پی پی پی سمیت کوئی بھی سیاسی پارٹی اٹھارویں آئینی ترمیم میں ردوبدل برداشت نہیں کریگی،اگر اس میں چھیڑ چھاڑ ہوتی ہے تو پاکستان کے اندر چھوٹے قومیتوں میں احساس محرومی مزیدبڑھی گی،مقتدر حلقے اٹھارویں آئینی ترمیم میں ردوبدل یا چھیڑ چھاڑ سے گریز کریں۔

انہوں نے مزید کہا کہ تبدیلی سرکار میں آئے روز سکینڈلز کا سامنے آنا ثابت کررہا ہے کہ ان کا خاتمہ اب ضروری ہوگیا ہے، پہلے آٹا چینی بحران، پھر آئی پی پیز اور اب جان بچانے والی ادویات کی جگہ طاقت کی دوائیاں درآمد کرنے کا سکینڈل سامنے آچکا ہے لیکن ہم اب بھی توقع نہیں رکھتے کہ یہ حکمران کسی بھی وزیر، مشیر یا دوسرے قصور وار شخص کو سزا دے سکیں گے،دوسروں پر کرپشن کے الزامات لگانے والے کپتان کی پوری ٹیم اور کپتان خود کرپشن کے دلدل میں پھنس چکے ہیں لیکن بدقسمتی سے احتساب کے ادارے اور بالخصوص نیب ان تمام معاملات پر خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہی ہے۔

مزید :

علاقائی -بلوچستان -کوئٹہ -