بحیرہ عرب میں بننے والے سمندر ی طوفان کا پاکستانی ساحلی علاقوں پر کیا اثر مرتب ہو گا ؟ جانئے 

بحیرہ عرب میں بننے والے سمندر ی طوفان کا پاکستانی ساحلی علاقوں پر کیا اثر ...
بحیرہ عرب میں بننے والے سمندر ی طوفان کا پاکستانی ساحلی علاقوں پر کیا اثر مرتب ہو گا ؟ جانئے 

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن ) محکمہ موسمیات نے کہاہے کہ بحیرہ عر ب میں موجود سمندری طوفان ’ تاوتے ‘ میںمزید شدت آ گئی اور طوفان کے مرکز میں ہوائیں 200 سے 220 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار س ے چل رہی ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ موسمیات نے بیان جاری کرتے ہوئے بتایا کہ سمندر ی طوفان ٹھٹھہ سے 730 کلومیٹر فاصلے پر ہے جبکہ کراچی سے سمندر طوفان کا فاصلہ 800 کلومیٹر ہے ، آج رات سمندری طوفان بھارتی گجرات سے گزرے گا تاہم اس سے پاکستان کے ساحلی علاقوں کو کوئی خطرہ نہیں ہے ، ٹھٹھہ، بدین ، تھر پارکر، عمر کوٹ میں گرج چک کے ساتھ بارش متوقع ہے جبکہ ان علاقوں میں 40 سے 60 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں بھی چل سکتی ہیں ۔ 

ماہرین طب کا کہناتھا کہ سمندر میں بننے والے طوفان تاوتے کی وجہ سے کراچی میں 3 دن تک گرم ترین موسم رہے گا۔بحیرہ عرب میں بننے والے طاقتور طوفان کے باعث کراچی سمیت سندھ اور بلوچستان کے ساحلی علاقے شدید گرمی کی لپیٹ میں ہیں، کراچی میں سمندری ہوائیں مکمل طور پر بند ہیں جس کے شہر میں شدید گرمی کی لہر جاری ہے، آج زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 43 ڈگری سینٹی گریڈ تک بڑھ سکتا ہے۔ شدید گرمی کی یہ لہر آئندہ 3 روز تک جاری رہے گی۔ اس دوراں گرد الود ہوائیں چلیں گی جبکہ ہیٹ ویو بھی ہوسکتی ہے۔

مزید :

ماحولیات -