امیر العظیم نے سپریم کورٹ کا 63 اے  کی تشریح کا فیصلہ جمہوریت کی مضبوطی کی جانب اہم قدم قرار دے دیا

امیر العظیم نے سپریم کورٹ کا 63 اے  کی تشریح کا فیصلہ جمہوریت کی مضبوطی کی ...
امیر العظیم نے سپریم کورٹ کا 63 اے  کی تشریح کا فیصلہ جمہوریت کی مضبوطی کی جانب اہم قدم قرار دے دیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی امیر العظیم نے سپریم کورٹ کے منحرف اراکین اسمبلی اور آئین کے آرٹیکل  63 اے  کی تشریح سے متعلق فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے اسے ملک میں جمہوریت کی مضبوطی کی جانب ایک قدم قرار دیا ہے۔

اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ اعلیٰ عدلیہ کا فیصلہ خوش آئند ہے اور جماعت اسلامی اس کا خیرمقدم کرتی ہے۔ اس  فیصلے کے نتیجے میں سیاسی جماعتوں کا بنیادی حق تسلیم ہوا ہے اور ہارس ٹریڈنگ کا راستہ بند کر دیا گیا ہے۔ماضی میں ہارس ٹریڈنگ اور اراکین اسمبلی کی منڈیوں کے کلچر سے عوام کا عوامی نمائندوں پر اعتماد مجروح ہوا  اور اس سے جمہوری عمل کو بھی ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہے۔

امیر العظیم کا کہنا تھا کہ  سپریم کورٹ کے فیصلہ کے بعدسیاسی قائدین سیاسی جماعتوں کو جمہوری انداز میں چلانے کا طریقہ کار واضح کریں۔ سیاسی جماعتیں اپنے  اندر جمہوری طرز عمل اور قیادت کے انتخابات کے حوالے سے بھی  واضح لائحہ عمل مرتب کریں۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتیں پرائیویٹ لمیٹڈ کمپنیوں کی طرح کسی فرد یا خاندان کی بجائے پوری پارٹی کی نمائندگی کرتی نظر آئیں تبھی ملک میں جمہوری رویے مضبوط ہوں گے، جمہوریت پر عوامی اعتماد بحال ہوگا اور آئین و قانون کی بالادستی قائم ہوگی۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -