پیرس حملوں کے بعدمسلمانوں کی مشکلات بڑھنے لگیں، مسلمانوں کی نگرانی سخت کردی گئی

پیرس حملوں کے بعدمسلمانوں کی مشکلات بڑھنے لگیں، مسلمانوں کی نگرانی سخت کردی ...
پیرس حملوں کے بعدمسلمانوں کی مشکلات بڑھنے لگیں، مسلمانوں کی نگرانی سخت کردی گئی

  

مشی گن /پیرس(آئی این پی )پیرس حملوں کے بعدمسلمانوں کی مشکلات بڑھنے لگیں، فرانس سمیت مختلف ممالک میں مسلمانوں کی نگرانی سخت کردی گئی،فرانسیسی وزیرداخلہ نے بعض مساجد کو بند کرنے کا عندیہ دیدیا جبکہ امریکی ریاست مشی گن کے گورنر نے شامی پناہ گزینوں کو قبول کرنے سے انکار کردیا ۔تفصیلات کے مطابق پیرس میں ہونے والے دہشت گردحملوں کے بعد فرانس سمیت مختلف ممالک میں رہنے والے مسلمانوں کی مشکلات بڑھنے لگی ہیں۔فرانس میں مسلمانوں کی نگرانی سخت کردی گئی ہے جبکہ ۔فرانسیسی وزیرداخلہ نے کچھ مساجد کو بند کرنے کا عندیہ دے دیا ہے۔ ایک فرانسیسی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے واضح طور پر کہا کہ نفرت پھیلانے والے علما کو ملک بدر کرکے ان کی مساجد کو بند کردینا چاہیے۔ فرانس سے گزشتہ 3 سال میں40 مسلم مذہبی رہنماوں کو ملک بدر کیا جاچکا ہے جن میں سے 55 فیصد رواں سال کے 6 ماہ میں نکالے گئے۔دوسری جانب امریکی ریاست مشی گن کے گورنر نے مزید شامی مہاجرین کو پناہ دینے سے انکار کردیا ہے۔ اپنے دفتر سے جاری کردہ ایک بیان میں رِک اسنائڈر نے کہا کہ مرکزی حکومت کی جانب سے سیکیورٹی انتظامات مزید بہتر بنانے تک وہ کسی پناہ گزین کو جگہ نہیں دیں گے ۔

مزید : بین الاقوامی