پاک بھارت سیریز ،کرکٹ بورڈ بغیر اجازت کوئی فیصلہ نہ کرے ؛ وزیراعظم

پاک بھارت سیریز ،کرکٹ بورڈ بغیر اجازت کوئی فیصلہ نہ کرے ؛ وزیراعظم

 اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم نواز شریف نے پاکستان کرکٹ بورڈ کو ہدایت کی ہے کہ بغیر اجازت دورہ بھارت کا کوئی فیصلہ نہ کیا جائے۔ دریں اثناء وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان کی رائے میں ایسا نہیں ہو سکتا کہ بھارت ددشمنی دشمنی کرتا رہے اور ہم دوستی دوستی کا راگ الاپتے رہیں۔ پاکستانی ٹیم کے بھارت جانے کا فیصلہ وزیراعظم کریں گے لیکن میں اس کی سخت مخالفت کرتا ہوں۔پنجاب ہاؤس اسلام آباد میں میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارت نے سابق وزیر خارجہ خورشید قصوری، نجم سیٹھی، شہریار خان اور غلام علی سب کے ساتھ زیاتی کی۔ اب تک پاکستانیوں کے ساتھ جو کچھ ہوا اس پر اب تک کارروائی کیوں نہیں ہوئی؟وہاں جو کچھ ہو رہا ہے اس کے پیچھے بھارت کی حکومت ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی کرکٹ ٹیم کو بھارت جا کر سیریز کھیلنے کی پیشکش کو کسی صورت قبول نہیں کرنا چاہیے۔ کرکٹ ٹیم کو بھارت بھیجنے کا فیصلہ وزیراعظم کی صوابدید ہے لیکن میں اس کی ہر فورم پر سخت مخالفت کرتا رہوں گا۔ چودھری نثار علی خان نے کہا ایسا نہیں ہو سکتا کہ بھارت دشمنی دشمنی کرتا رہے اور ہم دوستی دوستی کا راگ الاپتے رہیں۔ شیو سینا کو دہشتگرد تنظیم قرار دینے کا معاملہ عالمی سطح پر اٹھایا جائے گا۔ ادھر پاک بھارت سیریز کے معاملے پر شہریار خان نے وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان کے بیان کو نامناسب قرار دے دیا ہے۔ وہ پاک بھارت سیریز پر وفاقی وزیر چودھری نثار کے موقف کو کسی خاطر میں نہیں لائے۔ لاہور میں میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ ہم تو بھارت سے میچز چاہتے ہیں لیکن جو چودھری نثار کہہ رہے ہیں اسے مناسب نہیں سمجھتے۔ بھارت سے کھیلنے کا حتمی فیصلہ چار سے پانچ روز میں ہو جائے گا۔

مزید : صفحہ اول