بھارتی ریاست بہار کے بعد اترپردیش میں بھی لوگوں نے فرقہ پرستی کارڈ کو مسترد کر دیا

بھارتی ریاست بہار کے بعد اترپردیش میں بھی لوگوں نے فرقہ پرستی کارڈ کو مسترد ...

نئی دہلی(این این آئی)اتر پردیش میں ہونے والے پنجائیت کے انتخابات میں مسلمانوں سے شادی کرنے والی کئی دلت خواتین کامیاب ہوگئی ہیں ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست بہار کے بعد اترپردیش میں بھی لوگوں نے فرقہ پرستی کارڈ کو مسترد کر دیا ٗمذہب اور ذات پات کے نام پر سب سے زیادہ حساس سمجھے جانے والے ضلع مظفرنگر میں تبدیلی آگئی ٗمقامی پنجائیت کے انتخابات میں مسلمانوں سے شادی کرنے والی کئی دلت خواتین نے اقلیتوں کیلئے مخصوص نشستوں پر کامیابی سمیٹی۔دلت خواتین میں ایک راجپت چودھری ہیں جنہوں نے مقامی کالج کے پرنسپل جلال الدین سے 2001 میں شادی کی ،ایک سنیتا ہیں جنہوں نے 2009 میں محمد حسین سے شادی کر اپنا نام ستارہ رکھ لیا،ایک اوردلت خاتون سونی ہیں جنہوں نے 2007 میں شہاب الدین سے شادی کی۔نجیب آباد سے فاتح قرار پانے والی شکنتلا بھی ہیں جنہوں نے ایک مسلمان لطیف کو اپنا جیون ساتھی بنایاان خواتین نے اپنی شادیاں بھی رجسٹرڈ کروا لی ہیں۔ ان کی اگلی منزل پنجائیت چیئرپرسن کے عہدے کا انتخاب جیتنا ہے۔

مزید : عالمی منظر