ریٹرنگ آفیسر کی تعیناتی الیکشن کمیشن کا کام ہے،پیر آفتاب جیلانی

ریٹرنگ آفیسر کی تعیناتی الیکشن کمیشن کا کام ہے،پیر آفتاب جیلانی

کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان پیپلز پارٹی میرپور خاص ڈویژن کے صدر پیر آفتاب شاہ جیلانی نے کہا ہے کہ ریٹرنگ آفیسر کی تعیناتی حکومت کا نہیں بلکہ الیکشن کمیشن کا کام ہے اور ریٹرننگ آفیسر خواہ عدلیہ کا جج ہو یا کسی وفاقی یا صوبائی ادارے کا افسر، ریٹرننگ متعین ہونے کے بعد وفاقی یا صوبائی حکومت کا اس افسر پر کوئی انتظامی اختیار نہیں رہتا اور ریٹرننگ آفیسر الیکشن کمیشن کو ہی جوابدہ ہوتا ہے۔ پی پی پی میڈیا سیل سندھ سے جاری ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ متحدہ قومی موومنٹ حالیہ بلدیاتی الیکشن میں اپنی شکست اور پاکستان پیپلز پارٹی کی واضح فتح دیکھ کر بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکی ہے اور نہایت بھونڈے انداز میں بلکہ مضحکہ خیز انداز میں پاکستان پیپلز پارٹی پر اپنے من پسند ریٹرننگ آفیسر تعینات کرنے کے الزامات لگا رہی ہے اور اس حوالے سے الیکشن کمیشن کو ہی شکایات درج کروارہی ہے حالانکہ جو بھی افسر ریٹرننگ افسر متعین ہوگا وہ الیکشن کمیشن کی منظوری سے ہی ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ متحدہ قومی موومنٹ کی تو روایت ہی یہ رہی ہے کہ خواہ قومی یا صوبائی اسمبلی کے الیکشن ہوں یا بلدیاتی انتخابات ، ٹھپہ سازی کی فیکٹری کی بدولت الیکشن جیتے۔ یہ ان کا مزاج ہے لیکن اس مرتبہ ٹھپہ سازی کی فیکٹریاں بند کر دی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایسا محسوس ہورہا ہے کہ متحدہ میں تحریک انصاف کی روح سرایت کرچکی ہے جو ’’دھاندلی ‘‘ ’’دھاندلی ‘‘کا راگ الاپنے میں ایک دوسرے پر سبقت لے جانے کی کوشش کررہی ہے۔

مزید : کراچی صفحہ آخر