لاہور ہائیکورٹ بار کا عدالتی احکامات پر عمل در آمد کرنیوالے افسروں کی تبلیغی کا مطالبہ

لاہور ہائیکورٹ بار کا عدالتی احکامات پر عمل در آمد کرنیوالے افسروں کی تبلیغی ...

لاہور ( نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ بار نے عدالتی احکامات پر عمل درآمد نہ کرنے والے افسروں کی تبدیلی کا مطالبہ کرتے ہوئے دھمکی دی ہے کہ مطالبہ تسلیم نہ کرنے کی صور ت میں تحریک چلائی جائے گی ۔ہائی کورٹ بار کے اجلاس عام میں پیرس میں دہشت گردی کے افسوس ناک واقعہ کے خلاف قرار داد بھی منظور کرلی گئی ۔ لاہور ہائیکورٹ بار کا اجلاس عام ایسوسی ایشن کے صدر پیر مسعود چشتی کی سربراہی میں منعقد ہوا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے پیر مسعود چشتی نے کہا کہ پیرس میں خود کش حملے امن کو ثبوتاژ کرنے کی کوشش ہے جس کی وکلاء بھرپور مذمت کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کے معصوم شہریوں پر حملوں سے عالمی امن کو شدید نقصان پہنچ سکتا ہے اقوام متحدہ دنیا سے ناانصافی کے خاتمے کے لئے اپنا کردار ادا کر ے تاکہ دہشت گردی کے اس قسم کے واقعات سے نمٹا جا سکے۔ انہوں نے مزید کہا کہ عدالتیں آزدانہ طور پر اپنا کام کریں وکلاء ساتھ دیں گے ہم حکومت، عدلیہ سمیت کسی ادارے سے محاذ آرائی نہیں چاہتے ملک کے میں گڈ گورننس کی ضرورت ہے اگر کسی طرف سے گڈ گورننس کی بات کی جاتی ہے تو اس کا مطلب حکومت کی مخالفت نہیں لینا چاہئے، جمہوریت میں اختلاف رائے کو مثبت انداز میں لیا جانا چاہئے، انہوں نے ہاؤس کو بتایا کہ اس وقت عدالتوں میں عدالتی احکامات پر عمل نہ کرنے کے حوالے سے سرکاری افسران اور بیوروکریسی کے خلاف توہین عدالت کے 28 ہزار مقدمات دائر ہو چکے ہیں، عدالتی احکامات پر عمل درآمد نہ کرنے والے افسران اپنا قبلہ درست کر لیں اور حکومت سے بھی یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ میرٹ پر ایماندار فسروں کا تقرر کرے۔ جو عدالتوں کا احترام بھی کریں کہیں ایسا نہ ہو کہ اس مسئلے پر لاہور ہائیکورٹ بار کو تحریک چلانی پڑے۔ لاہور بار ایسو سی ایشن کے صدر اشتیاق اے خان نے کہا کہ سرکاری افسران عدالتی احکامات ردی کی ٹوکری میں پھنک دیتے ہیں انہوں نے کہا کہ سانحہ ڈسکہ کے کیس کے بعد اب پولیس والے وکلاء کو اپنا دشمن سمجھتے ہیں۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے دیگر مقررین نے کہا کہ پیرس دہشت گردی کا واقعہ اقوام عالم کے لئے چیلنج کی حیثیت رکھتا ہے ،پوری پاکستانی قوم دکھ کی اس گھڑی میں پیرس کے عوام کے ساتھ کھڑی ہے۔

مطالبہ

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر