سعودی عرب میں مقدس مقامات پر زمین کے نیچے ایسی شاندار چیز بنانے کا فیصلہ کرلیا گیا کہ جان کر ہر مسلمان عش عش کراُٹھے

سعودی عرب میں مقدس مقامات پر زمین کے نیچے ایسی شاندار چیز بنانے کا فیصلہ ...
سعودی عرب میں مقدس مقامات پر زمین کے نیچے ایسی شاندار چیز بنانے کا فیصلہ کرلیا گیا کہ جان کر ہر مسلمان عش عش کراُٹھے

  



ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں مقدس مقامات کی زیارت کو جانے والوں کے لئے ایک جگہ سے دوسری جگہ پہنچنا، خصوصاً حج کے ایام میں جب یہاں لاکھوں زائرین جمع ہوتے ہیں، کوئی آسان کام نہیں۔ سعودی حکام نے اس مشکل کو پیش نظر رکھتے ہوئے اب اس مسئلے کا ایسا حل نکال لیاہے کہ ارض مقدس جانے والے ہر مسلمان کا دل خوش ہو جائے گا۔

سعودی گزٹ کی رپورٹ کے مطابق مکہ ریجن ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے عرفات، جمرات، مزدلفہ، اور مسجد الحرام کو زیر زمین سرنگوں کے زریعے آپس میں منسلک کرنے کے منصوبوں کی منظوری دے دی ہے۔ رپورٹ کے مطابق ان منصوبوں کی منظوری گزشتہ روز امیر مکہ پرنس خالد الفیصل کی زیر صدارت منعقد ہونے والی خصوصی میٹنگ میں دی گئی۔ حتمی منظوری کے لئے یہ منصوبے خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان کے سامنے پیش کئے جائیں گے، جس کے بعد ان پر کام کا باقاعدہ آغاز ہوجائے گا۔

سعودی شہزادے کے قتل کے بعد عورت کا سر قلم

رابطہ سرنگوں کے علاوہ منیٰ کی ڈھلوان پر رہائشی ٹاور تعمیر کرنے کے منصوبے بھی زیر غور آئے۔ منیٰ میں پہلے ہی چھ رہائشی ٹاور تعمیر کئے جاچکے ہیں جن میں تقریباً 12ہزار حجاج کی رہائش کی گنجائش ہے۔ حجاج کرام کے مزدلفہ میں قیام کے لئے مزید سہولیات اور خیموں کی فراہمی پر بھی غور کیا گیا، جبکہ مسجد الحرام اور دیگر مقدس مقامات کے درمیان آمدورفت کی سہولیات کو بہتر کرنے پر بھی بات چیت کی گئی۔

مزید : عرب دنیا