حکومت نواز شریف سے کوئی انتقام نہیں لے رہی،شاید اب وہ واپس نہ آئیں:عثمان ڈار

حکومت نواز شریف سے کوئی انتقام نہیں لے رہی،شاید اب وہ واپس نہ آئیں:عثمان ڈار
حکومت نواز شریف سے کوئی انتقام نہیں لے رہی،شاید اب وہ واپس نہ آئیں:عثمان ڈار

  



اسلام آباد(ڈیلی  پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کے رہنما عثمان ڈار نے کہا ہے کہ حکومت نواز شریف سے کوئی انتقام نہیں لے رہی ،یہ تمام کیس سابق حکومتوں میں بنائے گئے، ن لیگ کے کئی لوگ مفرور ہیں، ہم نے اسی تناظر میں سکیورٹی بانڈز مانگے،ہم نے کوئی کیش نہیں مانگا تھا، اللہ تعالیٰ نواز شریف کو صحت دے مگر وہ شاید اب واپس نہ آئیں۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے عثمان ڈار نے کہا کہ حکومت انسانی ہمدردی کی بنیاد پر نواز شریف کو ریلیف دیا ہے اور یہ بات خود مسلم لیگ ن کے کچھ رہنما بھی مانتے ہیں ہم نے سات ارب کوئی کیش نہیں مانگا تھا بلکہ بانڈز کی شکل میں گارنٹٰ مانگی تھی اگر نواز شریف واپس آجاتے تو وہ بانڈز واپس ہوجانے تھے، ہم نے نوازشریف کی صحت پر سیاست نہیں کی بلکہ سیاست تو ن لیگ والے کر رہے تھے۔ دوسری بات یہ ہے کہ وزیر اعظم کو ئی انتقام نہیں لے رہے یہ ن لیگ والے ایسے ہی رونا رو رہے ہیں کیونکہ نواز شریف کو سزا تو ن لیگ کے دور میں پانامہ کیس میں ملی اور یہ کیس ہم نے نہیں بنائے بلکہ پہلی حکومتوں نے بنائے تھے۔ پی ایم ایل حکومت میں ہی اسحاق ڈار مفرور ہوئے اور ان لوگوں نے ہی اسحاق ڈار کو بیرون ملک بھگایا۔اُنہوں نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نواز شریف کو تندرستی عطا فرمائے ،عدالت نے ان کو جو چار ہفتے کا وقت دیا ہے ،اللہ کرے وہ اسی وقت میں واپس آئیں مگر وہ ایسا نہیں کریں گے کیونکہ ان کی پارٹی کے پہلے بھی کئی لوگ اشتہاری اور مفرور ہیں۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد