کرپشن، درآمد ات میں اضافے کے سبب معیشت اور سرمایہ کاری بہتر نہیں ہوئی: صدر مملکت

کرپشن، درآمد ات میں اضافے کے سبب معیشت اور سرمایہ کاری بہتر نہیں ہوئی: صدر ...

  



کراچی(این این آئی)صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہاہے کہ کرپشن اور درآمدات میں اضافے کی وجہ سے معیشت اور سرمایہ کاری بہتر نہیں ہوئی،موجودہ حکومت کے اقدامات کے سبب برآمدات بڑھی ہیں تاہم مختلف وجوہات کے سبب پاکستان مشکل حالات سے دوچار ہے۔کالا دھن،سکیورٹی مسائل اور دیگر رکاوٹیں معیشت کی راہ میں رکاوٹ ہیں،مسلم معاشروں میں خواتین کو بااختیار کرنا ہوگا۔گورنر ہاؤس کراچی میں ایف پی سی سی آئی کے تحت سالانہ(بقیہ نمبر7صفحہ12پر)

ایکسپورٹ ایوارڈ تقریب سے خطاب میں صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے برآمدکنندگان کو سراہتے ہوئے کہا کہ لگژری اشیاء کی درآمدات دستاویزی معیشت نہ ہونے سے تجارتی خسارہ بڑھا،ماضی میں حکومتوں نے غلط فیصلے کیے 70سال کی خرابیوں کو دور کرنے کیلئے فیصلے کرنا ہونگے۔انہوں نے کہاکہ ماضی میں حکومتوں نے آنکھیں بند کیے رکھیں،ہمارے ملک میں ٹیکس دینے کا رجحان نہیں ہے،کالادھن معیشت کی بہتری میں رکاوٹ ہے۔ صدر مملکت نے کہا کہ وزیراعظم نے بھی دنیا کو باور کرایا کہ مغربی ممالک اپنی پالیسوں میں تبدیلی لائیں تاکہ چھوٹے ممالک کی معیشت کو استحکام مل سکے۔ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ پاکستان بڑی معیشت ہے دنیا کی بڑی کنزیومر مارکیٹ ہیں پاکستان میں کاروبار کے لیے وسیع مواقع موجود ہیں،ترکی نے بھی مشکل حالات سے خود کو نکالادنیا میں فیصلے اور تعلقات کی بنیاد اصولوں کے ساتھ معیشت پر ہے جبکہ مسلم اقوام باہمی تجارت کو فروغ دیں،صدرمملکت عارف علوی نے صنعتکاروں کو کہا کہ وہ خواتین اور معذور افراد کو ملازمت کے مواقع دیں بااختیار خواتین ہی ترقی کا زریعہ ہیں۔ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ حکومتی اداروں اور ہر سطح پر کرپشن ہے اور بیرونی سرمایہ کاری کرپشن کے سبب متاثر ہوتی ہے اس موقع پر ملک بھر کے کامیاب برآمدکنندگان میں ایوارڈ تقسیم کیے گئے۔بعدازاں گورنر ہاؤس کراچی میں جوش ملیح آبادی میموریل کمیٹی کے تحت تقریب صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے معروف ادیبہ ڈاکٹر عالیہ امام کی کتاب کی رونمائی کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے صدرمملکت ڈاکٹرعار ف علوی نے کہا ہے کہ اب اصولوں اور انصاف پر دنیا میں فیصلے نہیں ہوتے دنیا پہلے بھی طاقت پر فیصلے کرتی تھی سرمایہ دارانہ سوچ نے دنیا پر قبضہ کر لیا۔ انہوں نے کہا کہ سرمایہ دارانہ سوچ نے دنیا پر قبضہ کرلیا ہے بائیں بازو کی سوچ کا ولولہ ختم ہوگیاہے۔ قوموں اور انسانوں کے لیے انٹرنیٹ کے ذریعے بہت سنگین خطرہ ہے۔ انٹرنیٹ کا ہتھیار ذہنوں پرحاوی ہے۔عارف علوی نے کہا کہ اب اصولوں اور انصاف پر دنیا میں فیصلے نہیں ہوتے دنیا پہلے بھی طاقت پر فیصلے کرتی تھی کشمیر کا مسئلہ 70سال سے پڑا ہواہے ہم جیسے کمزور انصاف کا ترازو لیے پھرتے ہیں۔ عارف علوی نے مزید کہا کہ اب اصولوں اور انصاف پر دنیا میں فیصلے نہیں ہوتے۔ دنیا پہلے بھی طاقت پر فیصلے کرتی تھی میں اب مایوس ہو گیا ہوں۔

صدر مملکت

مزید : ملتان صفحہ آخر