روپے کی قدر بڑھنے پر غیر ملکی قرضوں اور واجبات میں 457ارب کمی ہو گئی:سٹیٹ بینک

روپے کی قدر بڑھنے پر غیر ملکی قرضوں اور واجبات میں 457ارب کمی ہو گئی:سٹیٹ بینک

  



کراچی(این این آئی)روپے کی قدر بڑھنے کے بعد غیرملکی قرضوں اور واجبات کی مالیت 457ارب روپے کم ہوگئی۔سٹیٹ بینک آف پاکستان کے اعداد و شمار کے مطابق جون 2019کے اختتام پرغیر ملکی قرضوں اور واجبات کی مالیت 11ہزار 55ارب روپے تھی، تاہم  ستمبر کے اختتام پر یہ مالیت کم ہوکر 10ہزار 598ارب روپے کی سطح پر آگئی۔ جولائی سے ستمبر تک تین ماہ میں روپے کی قیمت 6.76روپے بڑھی، جون میں روپے کی ڈالر کے مقابلے میں قیمت 163.05روپے تھی جو ستمبر میں کم ہوکر 156.29روپے کی سطح پر آگئی۔اعداد و شمار میں بتایا گیا ہے کہ پہلی سہ ماہی میں مجموعی قرضوں اور واجبات کی مالیت میں 1266.5ارب روپے کا اضافہ ہوا اور ستمبر کے اختتام پر ملکی و غیر ملکی قرضوں اور واجبات کی مالیت 41ہزار 498ارب روپے تک پہنچ گئی، مجموعی قرضے اور واجبات کی ڈی پی کا 95.2فیصد ہیں جبکہ ستمبر میں مجموعی قرضے اور واجبات جی ڈی پی کا 104.3فیصد تھے۔

سٹیٹ بینک

مزید : صفحہ اول