کتوں کی بہتات کے باعث عوم سخت پریشان ہیں:حافظ نعیم الرحمٰن

کتوں کی بہتات کے باعث عوم سخت پریشان ہیں:حافظ نعیم الرحمٰن

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے شہر بھر میں کتوں کی بہتات،کاٹنے سے بڑھتے ہوئے واقعات اور ہلاکتوں پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے صوبائی حکومت،محکمہ صحت اور شہری وضلعی انتظامیہ کی نااہلی و ناقص کارکردگی کی شدید مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ حکومتوں کی نا اہلی کی وجہ سے بے شمار مسائل اور مشکلات میں گھرے ہوئے عوام اب کتوں کی بہتات کے باعث جان کو لاحق خطرات سے بھی سخت پریشان ہیں،جو حکومت عوام کو کتوں سے بھی تحفظ فراہم نہ کرسکے وہ اور کیا ریلیف فراہم کر سکے گی۔حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ محکمہ صحت سندھ کی اپنی رپورٹ اور اعدادوشمار کے مطابق رواں سال سگ گزیدگی کے ایک لاکھ 87 ہزار واقعات رپورٹ ہوئے اور مرنے والوں کی تعداد 23 ہے،رپورٹ حکومت کے لیے شرم کا مقام ہونا چاہیے لیکن صورتحال یہ ہے کہ صوبائی وزیر صحت اور بہبود آبادی کی جانب سے ان واقعات کی روک تھام کیلئے مؤثر اقدامات کرنے کے بجائے عوام کو کتوں سے دور رہنے اور تنگ نہ کرنے کا مشورہ دیا جارہا ہے جو متاثرہ افراد اور خاندانوں کے زخموں پر نمک پاشی کے مترادف ہیں۔حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ صوبائی حکومت کے ذمہ داران کی جانب سے عوام کو صحت اور طبی سہولیات فراہم کرنے کے دعوے تو بہت کئے جاتے ہیں لیکن عملاً صورتحال یہ ہے کہ سرکاری ہسپتالوں میں اینٹی ریبزویکسین نہ ہونے کے برابر ہے،ہنگامی اور فوری طبی امداد اور علاج معالجے کی بہتر سہولیات نہ ہونے کے باعث مریض در بدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں اور لاڑکانہ کے ایک بچے کو کتے کے کاٹنے کے بعد جن حالات کا سامنا ہے اور وہ موت اور زندگی کی جس کشمکش کا شکار ہے یہ ایک تازہ واقعہ ہے۔حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ حکومت کے سارے دعوے جھوٹے ثابت ہو رہے ہیں اور کراچی سمیت پورے صوبے میں سگ گزیدگی ایک بہت بڑا مسئلہ بن کر سامنے آیا ہے دیگر مسائل کے حل میں ناکامی سے دوچار ہونے والی حکومتی مسئلہ حل کرنے میں ناکام نظر آرہی ہے۔

مزید : صفحہ آخر