نئی اکائیوں کو پروفیشنل ٹیکس نیٹ میں لایا جائے، مکیش کمار چاولہ

نئی اکائیوں کو پروفیشنل ٹیکس نیٹ میں لایا جائے، مکیش کمار چاولہ

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ کے وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات اور  پارلیمانی امور مکیش کمار چاؤلہ نے افسران اور عملے سے کہا ہے کہ وہ رواں مالی سال کے دوران پروفیشنل ٹیکس کی وصولی میں تیزی لائیں اور چاروں پروفیشنل ڈویڑن کے  چالان جاری، وصولی اور اپ ڈیٹ کو یقینی بنائیں۔ یہ بات انہوں نے اپنے دفتر میں منعقد ہونے والے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔  سیکرٹری ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات عبدالحلیم شیخ، ڈائریکٹر جنرل شعیب احمد صدیقی، ڈائریکٹر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن اقبال احمد لغاری، ایڈیشنل ڈائریکٹر شبانہ پرویز اور دیگر افسران نے بھی اجلاس میں شرکت کی۔ انہوں نے مزید کہا، 'تمام افسران / اہلکار، جو پروفیشنل ٹیکس وصولی کے لئے تعینات ہیں، کو متحرک کیا جائے اور مالی سال 2019۔20 کے مطلوبہ اہداف کے حصول میں پروفیشنل ٹیکس کی وصولی کو بڑھانے کے لئے حکمت عملی تیار کرنے کے لئے ان کی رہنمائی کی جائے'۔ صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاؤلہ نے پاکستان کے سیکیورٹی ایکسچینج کمپنیوں میں رجسٹرڈ اور دستیاب کمپنیوں کی فہرست سے حکومت، نیم حکومت، خود مختار اور نیم خودمختار کمپنیوں / باڈیز  کو ٹیکس نیٹ میں لانے کی  بھی ہدایت دی۔ اس موقع پر ڈائرکٹر جنرل ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات شعیب احمد صدیقی نے صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاولہ کو آگاہ کیا کہ محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن سمال ٹریڈر / مارکیٹ ایسوسی ایشنز وغیرہ کو بھی ٹیکس کے دائرے میں لانے کے لئے خط لکھے گا۔ صوبائی وزیر مکیش کمار چاولہ نے افسران اور اہلکاروں کو متنبہ کیا کہ ٹیکس وصولی کے اہداف کو حاصل کرنے میں ناکام رہنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ سب کی ذمداری ہے کہ وہ اپنے فرائض ایمانداری، لگن اور محنت سے انجام دیں۔ 

مزید : صفحہ آخر