ایک اور وفاقی وزیرنے نوازشریف کی بیرون ملک علاج کی مخالفت کردی

ایک اور وفاقی وزیرنے نوازشریف کی بیرون ملک علاج کی مخالفت کردی
ایک اور وفاقی وزیرنے نوازشریف کی بیرون ملک علاج کی مخالفت کردی

  



کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)ایک اور وفاقی وزیرنے نوازشریف کے بیرون ملک علاج کی مخالفت کردی۔وفاقی وزیر برائے میری ٹائمز علی زیدی نے نوازشریف کے بیرون ملک علاج کی مخالفت کرتے ہوئے کہا ہے کہ کوئی بتا سکتا ہے نوازشریف کا علاج کیوں پاکستان میں نہیں ہوسکتا؟

ٹویٹر پردیئے گئے پیغام کے ساتھ انہوں نے سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کی ستائیس اپریل دوہزاراٹھارہ کی ایک ویڈیو بھی جاری کی ہے جس میں شہبازشریف نے دعویٰ کیاتھا کہ کاہنہ نو میں بنایاگیاسو بیڈکاتحصیل ہیڈ کوارٹرز دنیا کی بہترین علاج گاہوںمیں سے ایک ہے۔ انہوں نے کہا کیا کوئی انہوں بتاسکتا ہے کہ اس ہسپتال میں نوازشریف کاعلاج کیوں نہیں کیاگیا۔

واضح رہے کہ میڈیا رپورٹس میں بتایاجارہا ہے کہ سابق وزیراعظم نوازشریف پیر کی رات یامنگل کو لندن روانہ ہوں گے،نواز شریف کے ساتھ شہباز شریف اورذاتی معالج ڈاکٹر عدنان بھی لندن جائیں گے ، شہباز شریف نواز شریف کی مکمل صحت یابی تک لندن میں قیام کریں گے جبکہ مریم نواز پاکستان میں ہی رہیں گی۔

نجی ٹی وی ہم نیوز نے ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ نوازشریف کوطویل ہوائی سفر کیلئے طبی طور پر 24 گھنٹے درکار ہیں ،ڈاکٹر ز ذرائع کے مطابق سفر کے دوران پلیٹ لیٹس برقرار رکھنے اور دل کی تکلیف سے بچاﺅ کیلئے تیاری کریں گے ،ذرائع کا کہنا ہے کہ نوازشریف کو ایئر ایمبولینس کے ذریعے لندن لے جایا جائے گا،نوازشریف کے ساتھ شہبازشریف اور ذاتی معالج ڈاکٹرعدنان بھی جائیں گے ،شہباز شریف نوازشریف کی مکمل صحت یابی تک لندن میں قیام کریں گے ،ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ شہبازشریف اپنی کمر کی تکلیف کا علاج بھی کرائیں گے جبکہ مریم نواز پاکستان میں ہی رہیں گی ۔

مزید : قومی