نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم لیکن اس پر عمل درآمد کب ہوگا؟ وزارت داخلہ کا موقف بھی آگیا

نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم لیکن اس پر عمل درآمد کب ہوگا؟ وزارت ...
نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم لیکن اس پر عمل درآمد کب ہوگا؟ وزارت داخلہ کا موقف بھی آگیا

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے عدالتی حکم پر وزارت داخلہ نے تکنیکی نکتہ اٹھا دیا، ہفتے اور اتوار کے روز تعطیل ہوتی ہے، عدالت کا تحریری فیصلہ موصول ہونے تک وزارت داخلہ نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نہیں نکال سکتی۔اگر عدالتی فیصلے کی کاپی فراہم کر دی جائے تو سابق وزیراعظم کا نام ای سی ایل سے فوری بنیاد پر نکال دیا جائے گا۔

یادرہے کہ لاہور ہائیکورٹ کے ای سی ایل سے نام نکالنے کے حکم کے بعد مسلم لیگ ن کے قائد اور سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کے لندن میں علاج کیلئے انتظامات مکمل کر لیے گئے، لندن کے ہارلے سٹریٹ کلینک میں علاج ہو گا۔

دنیا نیوز کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف کے صاحبزادے حسن نواز اور حسین نواز نے لندن میں تمام انتظامات کر لیے ہیں، ماہر ڈاکٹرز سے معائنے کیلئے وقت حاصل کر لیا گیا ہے۔ نواز شریف کے لندن پہنچتے ہی انہیں ہسپتال منتقل کر دیا جائیگا۔ذرائع کے مطابق نواز شریف کو لندن لے جانے کیلئے ایئر ایمبولینس کی بکنگ کا عمل بھی جاری ہے۔ ایئر ایمبولینس کیلئے کاغذی کاروائی مکمل کی جارہی ہے۔ ابھی صرف وزارت داخلہ کی طرف سے نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا انتظار کیا جا رہا ہے۔

ذرائع کے مزید بتایا کہ حسین نواز نے اپنی بہن مریم نواز کو ٹیلیفون کیا ہے، ٹیلیفون کے دوران مریم نواز کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی باہر جانے کی تیاری مکمل ہے، سامان تیار ہوگیا ہے اور ڈاکٹر صاحبان طبی طور پر بھی تیاریوں میں مصروف ہیں، میں نے کمپنی سے رابطہ کر لیا ہے، کلیرنس سرٹیفکیٹ جلدی آجائے گا جس کے بعد روانگی ہوگی ۔

ادھر نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے کہا سابق وزیراعظم کی حالت سفر کے قا بل ہوتے ہی وہ آئندہ اڑتالیس گھنٹوں میں لندن کیلئے روانہ ہوجائیں گے۔انہوں نے بتایا کہ مکمل طبی سہولیات سے آراستہ ایئرایمبولینس پر لندن جائیں گے۔ڈاکٹر عدنان کے مطابق نوازشریف کیلئے آنے والی ایئرایمبولینس جلد ہی پاکستان پہنچ جائے گی۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد