آزادی مارچ اور دھرنا آخری سسکیاں لے رہے ہیں،ملک شاہ محمد 

آزادی مارچ اور دھرنا آخری سسکیاں لے رہے ہیں،ملک شاہ محمد 

  



بنوں (بیورورپورٹ)پاکستان تحریک انصاف کے ایم پی اے اور قبائلی سردار ملک شاہ محمد خان نے کہا ہے کہ آزادی مارچ اور دھرنا آخری سسکیاں لے رہے ہیں پلان بی شروع ہونے سے قبل ہی فیل ہوگیا ہے کیونکہ پلان بی کی کامیابی کیلئے پلان اے کا کامیاب ہونا ضروری ہوتا ہے جبکہ پلان سی شر وع و کرنے کی نوبت ہی نہیں آئیگی کیونکہ پلان سی اسمبلیوں سے اجتمای استفے دینا تھا لیکن اپوزیشن جماتیں پلان اے کی ناکامی دیکھ کر مولانا کو سرخ جھنڈی دکھا چکی ہیں کیونکہ مولانا فضل الرحمن نے اپوزیشن جماعتوں کے سامنے 15لاکھ کارکن لانے کا وعدہ کیا تھا لیکن تمام جماعتیں 40ہزار افراد بھی دھرنے میں نہ لاسکیں لہذا بڑی پارٹیاں مولانا فضل الرحمن کی طرح سیاسی بیروزگار نہیں ہونا چاہتی ہیں اور مولانا کو دھکا دینے والے انہیں تنہا چھوڑ چکے ہیں اب مولانا دھرنے کی ناکامی کا غصہ عوام پر اتاررہے ہیں اور پلان بی کے تحت سڑکیں بند کرنا ناکامی کا اعتراف ہے سڑکیں بند کرنے سے عوام میں جے یو آئی کے خلاف شدید غصہ پایا جاتا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے اخباری نمائندوں سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلیٰ محمود خان نے دھرنے کیلئے جانے والوں کی راہ میں کسی قسم کی رکاوٹیں کھڑی نہیں کیں بلکہ بارش کے دوران انہیں خیمے اور ڈاکٹرز فراہم کرنے کیلئے بھی وزیر اعظم عمران خان نے ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کو ہدایات جاری کیں لیکن جے یو آئی والوں نے انکار کردیا اور اگلے ہی دن دھرنا ختم کیا انہوں نے کہا کہ دھرنے کے دوران وفاقی حکومت نے بہترین حکمت عملی اختیار کی اور دھرنے والوں کو پسپائی پر مجبور کردیا جس پر ہم وزیر اعظم عمران خان اور حکومتی مذاکراتی کمیٹی کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ افسوس کا مقام ہے کہ جن لوگوں نے جے یو آئی کو ہمیشہ ووٹ دیئے ہیں انہی لوگوں کیلئے جے یو آئی نے راستے اور سڑکیں بند کی ہیں،جس سے نقصان حکومت کا نہیں بلکہ عوام کا ہورہا ہے۔

مزید : صفحہ اول