رواں سال ڈینگی کا پہلا مریض دم توڑ گیا ،وزیر اعلی نے نو ٹس لے لیا

رواں سال ڈینگی کا پہلا مریض دم توڑ گیا ،وزیر اعلی نے نو ٹس لے لیا

  لاہور(جنرل رپورٹر) لاہور میں رواں سال ڈینگی کا پہلا مریض دم توڑ گیا جبکہ لاہور کے صرف ایک شالیمار اسپتال میں ڈینگی کے 65 مریض زیرعلاج ہیںبتاےا گےا ہے کہ ڈینگی سے متاثرہ لاہور کے علاقے امن پارک شالیمار ٹان کا 26 سالہ نوجوان دوران علاج دم توڑ گیا جبکہ ڈینگی سے ہلاکت کا رواں سال کا یہ پہلا کیس ہے۔ ڈینگی سے مرنے والے اویس کے والدین کو دھمکی دی جارہی ہے کہ وہ یہ کہیں کہ مریض کی موت دل کا دورہ پڑنے سے ہوئی ہے دوسری جانب محکمہ صحت کے تمام تر انتظامات کے باوجود لاہور کے پسماندہ علاقے بند روڈ، چائنا اسکیم،گجر پورا اور گلشن پورا میں ڈینگی کا مرض بے قابوہوتا جارہا ہے گزشتہ سال بھی ڈینگی کے سب سے زیادہ کیسز شالیمار ٹان سے رپورٹ ہوئے تھے اور 26 سالہ نوجوان کی ہلاکت کے بعد ایک مرتبہ پھر شالیمار ٹان میں ڈینگی مریضوں کی تعداد بڑھتی جارہی ہے جبکہ محکمہ صحت کے مطابق پنجاب بھر میں 24 گھنٹے کے دوران ڈینگی کے 72 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جبکہ مریضوں کی مجموعی تعداد 386 ہوچکی ہے جس میں سے 44 مریضوں کا تعلق لاہور سے ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ سال ڈینگی مرض کے باعث پنجاب بھر میں درجنوں افراد ہلاک ہوگئے تھے ،دوسری طرف وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے ڈینگی کے مرض کے باعث ایک نوجوان کے جاں بحق ہونے کی خبر کا فوری نوٹس لیتے ہوئے مشیر صحت اور سیکرٹری صحت سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ وزیراعلیٰ نے انسداد ڈینگی اقدامات پر سختی سے عملدرآمد یقینی بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ انسانی جان سے قیمتی کوئی چیز نہیں اور انسانی زندگیوں کا تحفظ سب سے زیادہ اہم ہے لہٰذا متعلقہ ادارے انسداد ڈینگی پلان پر متحرک اور فعال انداز میں کام کریں،اس ضمن میں کوئی کوتاہی یا غفلت برداشت نہیں جائے گی۔انہوں نے کہا کہ ہسپتالوں میں مریضوں کو علاج معالجے کی بہترین سہولتیں فراہم کی جائیں وزیر اعلی محمد شہباز شریف نے ڈینگی کے مرض کے باعث نوجوان کے جاں بحق ہونے پر دکھ اور افسوس کرتے ہوئے لواحقین کے ساتھ ہمددری اورتعزیت کا اظہار بھی کیاہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1