”موثر ابلاغ کے لئے سوشل میڈیا کے استعمال پر بھی عبور ضروری ہے “

”موثر ابلاغ کے لئے سوشل میڈیا کے استعمال پر بھی عبور ضروری ہے “

لاہور(پ ر)” موجودہ دو رمیں سوشل میڈیا کی اہمیت سے انکار نہیں کیاجاسکتا موثر ابلاغ کے لئے سوشل میڈیا کے استعمال پر عبور ضروری ہے۔محکمہ تعلقات عامہ پنجاب حکومت اور عوام کے درمیان پل کا کردار ادا کررہا ہے۔ابلاغیات کے موجودہ دور میں محکمہ تعلقات عامہ جو موثر کردارکررہاہے اس سے انکار ممکن نہیں -ان خیالات کا اظہارابلاغی ماہرین کے معروف ادارے گلوبل سٹرٹیجیز اسلام آباد کے زیر اہتمام محکمہ تعلقات عامہ حکومت پنجاب کے افسروں کی ایک روزہ تربیتی نشست سے خطاب کرتے ہوئے ماہرین نے کیا۔جی ایس آئی کی مینجر آپریشنز مہناز سرورنے شرکاءکو” حکومت پنجاب کی سٹرٹیجک کمیونیکیشن اور میڈیا ریلشنز“کے عنوان سے منعقدہ تربیتی ورکشاپ کے اغراض ومقاصد اور ایجنڈے سے آگاہ کیا۔سارہ خان نے تربیتی نشست کے شرکاءکو سٹرٹیجک کمیونیکیشن کے طریق کار، مقاصد اور ضرورت سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ حکومت اور عوام کے درمیان ابلاغی خلیج کو دور کرنے کے لئے محکمہ تعلقات عامہ کے افسران اپنی مہارت کو حالات حاضرہ کے مطابق بہتر بنائیں اور سوشل میڈیا کی ابلاغی اہمیت کا ادراک بھی ضروری ہے ۔مریم ریاض نے پریس ریلیزاور میڈیا ہینڈلنگ پر کیس سٹڈی اور تجزیہ پیش کیا۔ڈائریکٹر نیوز تعلقات عامہ پنجاب رائے نذر حیات اور ڈائریکٹر لاہور ڈویژن عارف چوہدری نے محکمہ تعلقات عامہ کے افسران کی تربیتی نشست منعقد کرنے پر گلوبل سٹرٹیجزاسلام آباد کے میڈیا ایکسپرٹس کا شکریہ ادا کیا اور توقع ظاہر کی کہ ادارہ ہذا حکومت پنجاب کے افسران کو ابلاغیات کے جدید تقاضوں کے مطابق ٹریننگ فراہم کرنے کا سلسلہ جاری رکھے گا۔

تربیتی نشست میں ڈپٹی ڈائریکٹر ز تعلقات عامہ ، انفارمیشن آفیسرز اور پی آر اوز نے شرکت کی۔شرکاءنے ٹریننگ کا اہتمام کرنے پر ڈائریکٹر جنرل تعلقات عامہ پنجاب کا بھی شکریہ ادا کیا۔ قبل ازیں جی ایس آئی کے وفد نے ڈائریکٹر جنرل تعلقات عامہ پنجاب اطہر علی خان سے ملاقات کی جس میں ڈی جی پی آر نے جی ایس آئی کے وفد کو محکمے کے کارکردگی کے بارے میں بریفنگ دی اور انہیں محکمہ تعلقات عامہ کی تنظیم نو ،ابلاغی حکمت عملی اورمستقبل سے ہم آہنگ کرنے کے لئے لائحہ عمل سے آگاہ کیا- انہوں نے اس امید کااظہار کیاکہ جی ایس آئی کے تعاون سے افسران کی ٹریننگ کا سلسلہ مستقبل میں بھی جاری رہے گا -

مزید : میٹروپولیٹن 4