امریکی ڈکیت نے رقم لوٹنے کے بعد پولیس کو گرفتاری دےدی

امریکی ڈکیت نے رقم لوٹنے کے بعد پولیس کو گرفتاری دےدی
امریکی ڈکیت نے رقم لوٹنے کے بعد پولیس کو گرفتاری دےدی

  

سیاٹل (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی ریاست واشنگٹن میں بینک لوٹنے والا ایک ڈاکو اپنے جرم پر اتنا شرمندہ ہوا کہ لوٹی ہوئی رقم کے ساتھ وہ بینک کے باہر پولیس کا انتظار کرنے لگا۔ پولیس پہنچ گئی تو ملزم نے خود کو گرفتاری کے لیے پیش کر دیا۔

جرمن خبر رساں ادارے کے مطابق ریاست واشنگٹن کے شہر سیاٹل میں 64 سالہ ملزم ایک بینک میں ڈکیتی کی واردات کی غرض سے گیا،ملزم بینک میں داخل ہو کر کیش کاﺅنٹر تک پہنچا اور وہاں کلرک کو ایک کاغذ تھما دیا جس پر کیش اسکے حوالے کیے جانے کا مطالبہ درج تھا ۔ کیش کلرک نے ملزم کو مسلح سمجھتے ہوئے بغیر کسی ہچکچاہٹ کے کیش اس کے حوالے کر دیا جس کے بعد رچرڈ گورٹن نامی ملزم نے نقدی اپنے بیگ میں ڈالی اور بینک سے باہر نکل آیا۔ بینک سے باہر نکل کر ملزم نے موقع واردات سے فرار ہونے کی کوشش کرنے کی بجائے بینک کے سامنے چہل قدمی کرتے ہوئے پولیس کا انتظار کرنا شروع کر دیا ۔

 بینک انتظامیہ کی طرف سے پولیس کو ملزم کا حلیہ بیان کیے جانے کے باعث پولیس افسران کو رچرڈ گورٹن کو دیکھنے اور پھر گرفتار کرنے میں کوئی دیر نہ لگی۔ پولیس بیان کے مطابق ملزم نے اعتراف کیا کہ وہ بینک میں ڈکیتی کی واردات کا مرتکب ہوا تھا اور جیسے ہی وہ لوٹی ہوئی رقم لے کر بینک سے باہر نکلا تو اسکا ضمیر اسے ملامت کرنے لگا تھا۔ ملزم اس وقت جیل میں اپنے خلاف کارروائی شروع ہونیکا انتظار کر رہا ہے ۔

مزید : تفریح