ناخنوں کا حد سے زیادہ خیال رکھنے والوں کےلئے انتہائی تشویشناک خبر

ناخنوں کا حد سے زیادہ خیال رکھنے والوں کےلئے انتہائی تشویشناک خبر
ناخنوں کا حد سے زیادہ خیال رکھنے والوں کےلئے انتہائی تشویشناک خبر

  

لندن(نیوز ڈیسک) ہر روز ناخنوں کی دیکھ بھال آپ کو بے عیب ہاتھ تو دے سکتی ہے، لیکن اس کے اثرات زیادہ دیرپا نہیں ہوتے، کیونکہ روزانہ ناخنوں اور ہاتھوں کی دیکھ بھال بالآخر ناخنوں کے ٹوٹنے، مڑنے اور پھٹنے پرفتح ہوتی ہے اس سلسلے میں سائنس دانوں نے ناخن تراشنے اور کاٹنے اور رگڑنے کے اثرات کا تجزیہ کیا ہے جس سے ثابت ہوا ہے کہ ہر روز مینی کیور کروانا ناخنوں کے مسائل کی اصل وجہ ہے۔ اس سلسلے میں ناٹنگھم یونیورسٹی کے محققین کا کہنا ہے کہ آج کل ہر جگہ نیل سیلون کھل گئے ہیں جو ناخنوں سے متعلق ان مسائل کو بڑھاوا دے رہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ اکثر و بیشتر ناخنوں کو کاٹتے رہنا انہیں خوفناک حد تک بدصورت بنا دیتا ہے اور ناخنوں پر ایسے بُرے اثرات میں ان کی اکثر و بیشتر ہونے والی تراش خراش کا بڑا ہاتھ ہے اس کے علاوہ اسے مسائل ان لوگوں میں بھی ہوتے ہیں جنہیں اپنے ناخن چبانے کی عادت ہوتی ہے۔ بڑھے ہوئے اور ٹوٹے ناخنوں کو نیل کہتے ہیں، جن ناخنوں کی جڑیں نکلی ہوتی ہیں یا پھٹے ہوئے ہوں انہیں طبی اصطلاح میں سپون نیل کہتے ہیں، زیادہ ناخن کاٹنے سے بعض اوقات ان کی سرجری بھی کروانی پڑ سکتی ہے۔

مزید : تعلیم و صحت