”مجھے مین آف دی میچ ملا تو بابر نے کہا۔۔۔“ سنچریوں کا ”ڈھیر“ لگانے والے بابر اعظم کو دوسرے میچ میں بھی مین آف دی میچ کا ایوارڈ نہ ملا تو انہوں نے شاداب خان سے کیا کہا؟ سپنر نے ایسی حقیقت بتا دی کہ جان کر آپ بابر اعظم کو سیلوٹ کرنے پر مجبور ہو جائیں گے

”مجھے مین آف دی میچ ملا تو بابر نے کہا۔۔۔“ سنچریوں کا ”ڈھیر“ لگانے والے ...
”مجھے مین آف دی میچ ملا تو بابر نے کہا۔۔۔“ سنچریوں کا ”ڈھیر“ لگانے والے بابر اعظم کو دوسرے میچ میں بھی مین آف دی میچ کا ایوارڈ نہ ملا تو انہوں نے شاداب خان سے کیا کہا؟ سپنر نے ایسی حقیقت بتا دی کہ جان کر آپ بابر اعظم کو سیلوٹ کرنے پر مجبور ہو جائیں گے

  


ابوظہبی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان نے سری لنکا کو دوسرے ون ڈے انٹرنیشنل میں شکست سے دوچار کیا تو اس میچ میں نصف سنچری اور پھر اہم موقع پر 3 وکٹیں لینے والے شاداب خان کو مین آف دی میچ کا ایوارڈ دیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔سری لنکا کے خلاف کرکٹ میچ میں پاکستانیوں نے ایسا نعرہ لگا دیا کہ گراﺅنڈ میں عماد وسیم شرم سے پانی پانی ہو گئے

دلچسپ بات یہ ہے کہ بابر اعظم نے پہلے میچ کی طرح اس میچ میں بھی اس وقت سنچری بنائی جب پاکستانی ٹیم مشکلات کا شکار تھی اور اگر وہ بھی کریز پر نہ ٹھہرتے تو پاکستان کیلئے یہ میچ جیتنا ناممکن ہوتا۔ لیکن پہلے میچ میں مین آف دی میچ کا ایوارڈ شعیب ملک کو دیدیا گیا اور دوسرے میچ میں شاداب خان اس کے حق دار ٹھہرے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے بی بی سی کے نمائندے نے جب اس معاملے پر شاداب خان سے سوال پوچھا تو انہوں نے ایسا جواب دیا کہ جان کر آپ بابر اعظم کو ”سیلوٹ“ کرنے پر مجبور ہو جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔”26 اکتوبر سے پہلے عمران خان کو گرفتار کر لیں گے“ وفاقی وزیر نے تہلکہ خیز اعلان کر دیا، تحریک انصاف میں کھلبلی مچ گئی

شاداب خان نے بتایا کہ بابر اعظم نے صرف اتنا ہی کہا ”میں 100 کرتا رہوں گا، کوئی دوسرا مین آف دی میچ لیتا رہے، بس ہماری ٹیم جیتتی رہے۔“

مزید : کھیل


loading...