کراچی میں فائرنگ ، تحریک انصاف کے رکن اسمبلی زخمی حالت میں ہسپتال منتقل

کراچی میں فائرنگ ، تحریک انصاف کے رکن اسمبلی زخمی حالت میں ہسپتال منتقل
کراچی میں فائرنگ ، تحریک انصاف کے رکن اسمبلی زخمی حالت میں ہسپتال منتقل

  



کراچی(ویب ڈیسک) رنچھوڑ لائن کے علاقے میں فائرنگ کا واقع پیش آیا ہے جس کے نتیجے میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے مقامی رہنما اوررکن صوبائی اسمبلی رمضان گھانچی زخمی ہو گئے ہیں۔ ایم پی اے کو زخمی حالت میں سول ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔پاکستان تحریک انصاف کے رہنما خرم شیر زمان اور دیگر رہنما سول ہسپتال روانہ ہو گئے ہیں۔ واضح رہے کہ رمضان گھانچی حلقہ پی ایس 109 کراچی ساوتھ 3 سے رکن سندھ اسمبلی ہیں۔نیپئر تھانے کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رہنما پی ٹی آئی خرم شیر زمان نے بتایا کہ رمضان گھانچی نے مجھے فون پر اطلاع دی کہ ان پر فائرنگ کی گئی ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ یوسی چئیرمین سلمان سومرو کے بیٹے نے ان پر فائرنگ کی ہے۔خرم شیرزمان کا کہنا تھا کہ رمضان گھانچی کے ٹانگ پر گولی لگی ہے جبکہ ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔انہوں نے کہا کہ رمضان گھانچی پر فائرنگ کرنے والے افراد کو فوری گرفتار کیا جائے اور یہ ریاست کی ذمہ داری ہے کہ ان ملزمان کو کڑی سزا دی جائے۔ صوبائی حکومت عوام کی جان و مال کی حفاظت میں ناکام ہوچکی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہمیں لگتا ہے کہ یہ واقعہ شہر کے امن کو تباہ کرنے کی کوشش ہے۔ وزیر اعلیٰ کو صرف وفاق پر تنقید کرنی آتی ہے۔ اس حوالے سے سندھ اسمبلی میں احتجاج بھی کیا جائے گا۔پولیس کی جانب سے رمضان گھانچی کا بیان قلم بند کرلیا گیا ہے جس کے بعد واقعے کا مقدمہ 16/2019 نیپئر تھانے میں درج کرلیا گیا ہے۔ مقدمہ زخمی ایم پی اے کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے۔مقدمے میں اقدام قتل اور لڑائی جھگڑے کی دفعات شامل کرنے کے ساتھ ساتھ چار ملزمان کو نامزد کیا گیا ہے جس میں سے دو افراد حراست میں ہیں۔پولیس کے مطابق حملے کے مقام سے نائن ایم ایم پستول کے دو خول ملے ہیں جبکہ کراچی ٹیمبر مارکیٹ کے چئرمین سلمان سومرو اور ان کے بیٹے کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی