مذاکرات سے انکار کے بعد مولانا فضل الرحمان کا اصل ایجنڈا واضح ہوگیا:ہمایوں اختر خان

مذاکرات سے انکار کے بعد مولانا فضل الرحمان کا اصل ایجنڈا واضح ہوگیا:ہمایوں ...
مذاکرات سے انکار کے بعد مولانا فضل الرحمان کا اصل ایجنڈا واضح ہوگیا:ہمایوں اختر خان

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کے سینئر مرکزی رہنما و سابق وفاقی وزیر ہمایوں اختر خان نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کی جانب مذاکرات سے انکار کے بعد ان کا اصل ایجنڈا واضح ہوگیاہے،اپنی ذات کیلئے ملک کے مفادات کو پس پشت ڈالنے والوں کے چہرے بے نقاب ہو چکے ہیں اور عوام ان کا کڑا محاسبہ کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق ہمایوں اختر خان نے کہا کہ پاکستانی عوام وفاقی دارالحکومت کی جانب مارچ کے اصل مقاصدسے بخوبی آگاہ ہیں اس لئے منفی سر گرمیوں کی منصوبہ بندی کرنے والوں کو کوئی پذیرائی نہیں ملی،کرپٹ ٹولہ با شعورکی آنکھوں میں دھول نہیں جھونک سکتا۔ انہوں نے کہاکہ حکومت نے اپنی ذمہ داری پوری کرتے ہوئے مولانافضل الرحمان سے مذاکرات کیلئے عملی اقدامات اٹھائے لیکن بات چیت کی جانب پیشرفت سے قبل ہی مولانافضل الرحمان کا انکارواضح کرتا ہے کہ ان کا اصل ایجنڈا کیا ہے؟حکومت کی جانب سے مذاکرات کی پیشکش کو کمزوری نہ سمجھاجائے، عوام کے جان و مال کا تحفظ حکومت کی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ مافیا کرپشن کا کاروبار بند ہونے کی وجہ سے پریشان ہے،اس لئے آگے بڑھتے ہوئے پاکستان کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کی جارہی ہیں،حکومت نے غیر معمولی فیصلوں کے ذریعے ملک کو درست سمت میں گامزن کیا،معیشت کو دستاویزی کرکے چور راستے بند کر رہے ہیں،اداروں کی بہتری کیلئے ڈھانچہ جاتی اصلاحات کی جارہی ہیں۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور