31 دسمبر تک تمام پراپرٹی یونٹس کی اسیسمنٹ کو مکمل کیا جائے:صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کی ہدایت

31 دسمبر تک تمام پراپرٹی یونٹس کی اسیسمنٹ کو مکمل کیا جائے:صوبائی وزیر ...
31 دسمبر تک تمام پراپرٹی یونٹس کی اسیسمنٹ کو مکمل کیا جائے:صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کی ہدایت

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن حافظ ممتاز احمد نے ہدایت کی ہے کہ 31 دسمبر تک تمام پراپرٹی یونٹس کی اسیسمنٹ کو مکمل کیا جائے اور اس ضمن میں متعلقہ انسپکٹر کی طرف سے اس امر سے متعلق تصدیقی سرٹیفکیٹ فراہم کیا جائے کہ اس کے سرکل میں کوئی پراپرٹی غیر تشخیص شدہ یا کم تشخیص شدہ نہیں ہے, تمام افسران و اہلکاران عوام کے ساتھ بہترین رویہ اختیار کریں۔

انہوں نے یہ ہدایات منسٹر بلاک میں پراپرٹی ٹیکس سے متعلق محکمہ ایکسائز ریجن اے لاہور کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے جاری کیں جس میں پراپرٹی ٹیکسز کی وصولی کے اہداف کے سلسلے میں ایکسائز افسران و انسپکٹرز کی انفرادی کارکردگی کا جائزہ لیا گیا۔ صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن نے فرداً فردا ًایکسائز افسران و انسپکٹرز کی کارکردگی کا جائز لیتے ہوئے اہداف پورا نہ کرنے والے انسپکٹرز کو وارننگ دی اور کہا کہ وہ اپنی کارکردگی کو بہتر بنائیں بصورت دیگر ناقص کارکردگی دکھانے والوں کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ انہوں نے ایکسائز افسران سے کہا کہ وہ پراپرٹی ٹیکس و دیگر ٹیکسوں کی وصولی کے سلسلے میں ماتحت عملہ کی کارکردگی کی نگرانی کریں تاکہ اہداف کے حصول کو یقینی بنایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ محکمانہ امور میں متعلقہ قوانین اور قواعد و ضوابط کی مکمل پابندی کی جائے تاکہ ٹیکسوں کی وصولی کے تمام نظام کو شفاف رکھا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکس کا پیسہ عوام کی امانت ہے اسے عوام کی فلاح و بہبود پر ہی خرچ کیا جائے گا صوبائی وزیر نے خبردار کیا کہ کسی قسم کی کرپشن برداشت نہیں کی جائے گی اور بے ضابطگی اور بیقاعدگی کی صورت میں متعلقہ ملازمین کو جواب دہ ہونا پڑے گا۔حافظ ممتاز احمد نے کہا کہ محکمہ ایکسائز کے تمام نظام کو انفارمیشن ٹیکنالوجی کی مدد سے جدید خطوط پر استوار کیا جارہا ہے اس سلسلے میں گاڑیوں کی رجسٹریشن سمیت متعدد جدید اصلاحات متعارف کرائی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پراپرٹی ٹیکس کے نظام میں بھی جدت لائی جارہی ہے اور پراپرٹی مالکان متعلقہ قواعد و ضوابط اور طریقہ کار کے تحت گھر بیٹھے آن لائن اپنی جائیداد کی تشخیص کر سکیں گے اور اپنے ذمہ واجب الاداء ٹیکس کی ادائیگی بھی کر سکیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ پنجاب کے ہر ڈویژن کا دورہ کرکے محکمہ ایکسائز کے افسران کی انفرادی کارکردگی کا جائزہ لے رہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ جدید اصلاحات اور نگرانی کی بدولت ٹیکسوں کی وصولی میں خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے اس سلسلے میں اعلی نظم و نسق پر کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور