کشمیر کی صورتحال کے پیش نظر کرتار پور پر بات نہیں ہونی چاہئے ،سینیٹر مصطفی نوازکھوکھر کی منطق

کشمیر کی صورتحال کے پیش نظر کرتار پور پر بات نہیں ہونی چاہئے ،سینیٹر مصطفی ...
کشمیر کی صورتحال کے پیش نظر کرتار پور پر بات نہیں ہونی چاہئے ،سینیٹر مصطفی نوازکھوکھر کی منطق

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)پیپلز پارٹی کے مصطفی نواز کھوکھر نے کہاہے کہ کشمیر پر جوکچھ ہوچکاہے ، اس کے بعد کیا وجہ ہے کہ کرتار پور پر بھارت سے بات کی جائے ؟

جیونیوز کے پروگرام ”کیپٹل ٹاک “میں گفتگو کرتے ہوئے مصطفی نواز کھوکھر نے کہا کہ اپنے جلسوں میں سب سے زیادہ عمران خان نے مذہب کارڈ کا استعمال کرتے ہیں، ریاست مدینہ کی بات کریں لیکن غریب عوام کے مسائل حل کریں ، اس وقت غریب طبقے کے پاس تین میں سے صرف ایک آپشن ہے ، گھریلو اخراجات پورے کر ے، بچوں کوتعلیم دے یا کھانا کھائے ۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان میں تقریباً20لاکھ نوجوان بیروزگار ہیں ، جب سے یہ حکومت آئی ہے ملک میں صنعتی پیدا وار میں کمی آئی ہے ، ٹیکس کی مد میں 118ارب روپے کاشارٹ فال ہے ، پوری دنیا میں تیل سستا ہوا اورپاکستان میں مہنگا کردیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ کشمیر پر جوکچھ ہوچکاہے ، اس کے بعد کیا وجہ ہے کہ کرتار پور پر بھارت سے بات کی جائے ؟بھارت کے ساتھ کرتار پور کے معاملے پربات نہیں ہونی چاہئے ۔

مزید : قومی