”نواز شریف مولانا فضل الرحمان سے وہی ریہرسل کریں گے جو اس سے قبل۔۔۔“، رﺅف کلاسرا کی پیشگوئی

”نواز شریف مولانا فضل الرحمان سے وہی ریہرسل کریں گے جو اس سے قبل۔۔۔“، رﺅف ...
”نواز شریف مولانا فضل الرحمان سے وہی ریہرسل کریں گے جو اس سے قبل۔۔۔“، رﺅف کلاسرا کی پیشگوئی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)تجزیہ کار رﺅف کلاسرا نے کہا کہ عمران خان بھی پارلیمنٹ کو زیادہ اہمیت دینے کیلئے تیار نہیں ہیں ،ان کارویہ بھی اس حوالے سے نواز شریف والاہے ، نواز شریف مولانا فضل الرحمان کے ساتھ وہی ریہرسل کریں گے جو اس سے پہلے بے نظیر بھٹو کے ساتھ کرچکے ہیں۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام ”آف دی ریکارڈ“میں گفتگو کرتے ہوئےرﺅف کلاسرا نے کہا کہ جوسیٹ اپ خود بنایا گیاہے ، اس کوکیسے ختم کرنے کیلئے مولانا فضل الرحمان کولایا جاسکتا ہے ؟ انہوں نے کہا کہ یہ بڑی واضح پوزیشن ہے کہ نواز شریف کے ساتھ نہیں بیٹھا جاسکتا ، اس وقت جوراستہ بچتاہے وہ یہ ہے کہ اسٹیبلشمنٹ کیلئے عمران خان ہیں۔نواز شریف سے بہتر کوئی جانتا ہی نہیں ہے کہ کس موقع سے کیسے فائدہ اٹھاناہے اور کیسے ڈیل کرنی ہے ؟

انہوں نے کہا کہ نواز شریف مولانا فضل الرحمان کے ساتھ وہی ریہرسل کریں گے جو اس سے پہلے بے نظیر بھٹو کے ساتھ کرچکے ہیں، میں ابھی بھی سمجھتا ہوں کہ دوہزار تین سے لیکر دوہزار سات تک ہم نے بہت کچھ سیاسی طورپر سیکھا تھا لیکن جب پیپلز پارٹی آئی تو ہماری چیخیں نکل گئیں اورپھرنواز شریف آئے اورپھر یہی کچھ ہوا ۔انہوں نے کہا کہ البتہ پیپلز پارٹی اورنواز شریف کی حکومتوں نے میڈیا کاکریک ڈاﺅن کرنے کی کوشش نہیں کی لیکن اپناحصہ بقدر جثہ پورا کرلیا ۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان بھی پارلیمنٹ کو زیادہ اہمیت دینے کیلئے تیار نہیں ہیں ،ان کارویہ بھی اس حوالے سے نواز شریف والاہے ۔ اس وقت جمہوریت مزید کمزور ہورہی ہے لیکن یہ ذہن میں رکھیں کہ حکومت کوئی فوجی حمایت سے اقتدار میں نہیں آئے ، وہ جتنا جمہوریت اور میڈیاکو کمزور کرتے جائیں گے ، خود کوکمزور کرتے جائیں گے ۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد