جدید زرعی مشینری خریدنے کیلئے ای کریڈٹ سکیم 

جدید زرعی مشینری خریدنے کیلئے ای کریڈٹ سکیم 
جدید زرعی مشینری خریدنے کیلئے ای کریڈٹ سکیم 

  

پی ٹی آئی حکومت پہلی حقیقی کسان دوست حکومت ہے، جس نے زرعی شعبے میں انقلاب برپا کر دیا ہے۔پنجاب میں وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی حکومت نے جہاں شہروں میں عوام الناس کی فلاح و بہبود کے لئے بہت سے منصوبے شروع کئے ہیں وہیں دیہی ترقی، کسانوں کی حالت زار بہتر بنانے کے لئے بھی بہت سے اقدامات کئے ہیں۔ پاکستان ایک زرعی ملک ہے اور زراعت و خوراک کے حوالے سے پنجاب کا ایک خاص مقام ہے۔ یہاں پانی کی فراوانی سے زرخیز زمین سے پاکستان بھر کے لئے اناج پیدا ہوتا ہے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کاشتکاروں کو زرعی مشینری کی الاٹمنٹ کے سرٹیفکیٹ اور ای کریڈٹ سکیم کے تحت چیک تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کاشتکار بھائیوں کی سہولت کے لئے ای کریڈٹ سکیم کے قرضوں کی حد بڑھا دی ہے۔ کاشتکار کواب بیج،کھاد اور دیگر زرعی مداخل کے حصول میں دشواری کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا۔ربیع کی فصل کے لئے ای کریڈٹ سکیم کے قرضوں میں 5ہزار اور خریف کے لئے 10ہزار روپے اضافہ کیا گیاہے۔ صوبائی وزیر زراعت سید حسین جہانیاں گردیزی نے تقریب سے خطاب میں کہا کہ پنجاب میں زراعت کا فروغ ملک کی معاشی ترقی کا ضامن ہے۔ جدید زرعی مشینری کے استعمال سے فی ایکڑ پیداوار بڑھے اور لاگت میں کمی آئے گی اپنے اڑھائی سالہ دور حکومت میں زراعت کے شعبے میں کئی گئی اصلاحات کا ذکر کرتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھا کہ حکومت کاشتکاروں کیساتھ مکمل ہمدردی رکھتی ہے اور مشکل وقت میں کاشتکاروں کیساتھ کھڑے ہیں۔نئے پاکستان میں کاشتکار سر اٹھا کر جئے گا۔ پنجاب کی تاریخ میں پہلی مرتبہ گنے کے کاشتکاروں کو ان کی محنت کا پورا معاوضہ دیا گیا۔  دو سال میں شوگر ملوں سے کاشتکاروں کو 99فیصد واجبات کی ادائیگی یقینی بنائی ہے۔

کاشتکاروں کی خوشحالی او رزراعت کے فروغ کے لئے گندم اور گنے کے امدادی نرخ میں خاطر خواہ اضافہ کیاجا رہا ہے حکومت پنجاب کی طرف سے گزشتہ2سال میں کاشتکاروں کو 35ارب روپے کے بلاسود قرضے فراہم کئے جا چکے ہیں۔وزیراعظم زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت 300ارب روپے کاشتکاروں کی خوشحالی او رزرعی ترقی پر صرف کئے جا رہے ہیں۔ فی ایکڑ پیداوار میں اضافے اور آبپاشی کی سہولتوں میں بہتری لائی جا رہی ہے۔ کاشتکاروں کے لئے جدید طریقہ زراعت سے ہم آہنگ کرنے کے لئے زرعی مشینری کا استعمال بے حدضروری ہے۔ حکومت پنجاب سبسڈی فراہم کر کے کاشتکارو ں کو جدید مشینری خریدنے کی ترغیب دیتی ہے۔پنجاب میں کاشتکاروں کو 46 کروڑ روپے کی جدید ترین مشینری امدادی نرخ پر فراہم کی جا چکی ہے۔ 2سال میں 78ہزار ایکڑ بنجر اراضی کو قابل استعمال بنانے سے کاشتکار کی آمدن میں اڑھائی ارب روپے اضافہ ہوا۔محکمہ زراعت مختلف فصلوں کی 80نئی اقسام کی منظوری دے چکا ہے۔ پنجاب میں زرعی تحقیق کے لئے 6ارب روپے مختص کئے گئے۔حکومت پنجاب کے کسان دوست اقدامات کی وجہ سے اس سال گندم، چنے اور کینولا کی اضافی پیداوار حاصل ہوئی۔

دیہی علاقوں کو بڑے شہروں و قصبوں سے ملانے کے لئے پختہ سڑکوں کی بہت اہمیت ہے۔ فصلیں، پھل اور دیگر زرعی اجناس شہروں کی منڈیوں تک پہنچانے کے لئے رابطہ سڑکیں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔وزیر اعلیٰ کی طرف سے صوبہ بھر میں دیہی علاقوں کو مین روڈز اور شہروں سے ملانے کے لئے نئی رابطہ سڑکوں کی تعمیرمیں اعلیٰ معیار کا میٹریل استعمال کرنے کا بھی حکم دیاگیاہے تاکہ کاشتکاروں کو زرعی اجناس، سبزیاں، پھل وغیرہ فارم و کھیتوں سے مارکیٹوں، سبزی و غلہ منڈیوں تک لانے میں کسی قسم کی دشواری کا سامنا نہ کرناپڑے۔ گاؤں، دیہات اور شہروں کے مابین اچھی رابطہ سڑکیں کاروباری سرگرمیوں کو فروغ دیں گی اور معاشی خوشحالی کی راہ ہموار ہو گی۔ماضی میں دیہی علاقوں میں بنائی جانے والی سڑکیں سال دو سال میں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو جایا کرتی تھیں تاہم اس منصوبے کے تحت سڑکوں کے معیار پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ پنجاب میں پہلے مرحلے میں پرانی سڑکوں کو مرمت کیا جا رہا ہے اور بعدازاں نئی رابطہ سڑکوں کی تعمیر عمل میں آئے گی۔ یہ ایک میگا پراجیکٹ ہے جس میں شفافیت کو یقینی بنانے کے لئے بین الاقوامی معیار کو مدنظر رکھا جا رہاہے پنجاب حکومت کی طرف سے زراعت، کسانوں اور دیہی ترقی کے لئے کئے گئے اقدامات، وزیر اعلیٰ عثمان بزدار کی دیہی عوام سے محبت کی نشانی ہے۔

حکومت پنجاب پسماندہ گاؤں اور دیہی آبادی کو ترقی دینے کے لئے دن رات محنت کر رہی ہے اور جلد ہی اس کے ثمرات عوام تک پہنچیں گے۔ دیہی ترقی سے نہ صرف ہماری غذائی ضروریات پوری ہوں گی،بلکہ ہمارے دیہاتی عوام بھی ترقی کی منازل طے کریں گے۔ تعلیم کے فروغ سے کسان کھیتی باڑی میں جدید طریقے اور آلات استعمال کرسکیں گے اور ملک کی خوشحالی میں اپنا حصہ ڈال سکیں گی پنجاب حکومت کا زرعی پیکیج صوبہ بھر کے کسانوں،چھوٹے زمینداروں کی خوشحا لی اور زراعت کے شعبہ کی ترقی میں تاریخی سنگ میل ثابت ہوگا اور اس کسان دوست اقدام سے حکومت پنجاب نے ملکی معیشت کی بحالی اور مستقل بنیادوں پر تعمیروترقی کی بنیاد رکھ دی ہے۔ حکومت پنجاب عملی طور پر تمام شعبوں میں مثالی کارکردگی کا مظاہرہ کر رہی ہے اور بالخصوص زراعت جیسے اہم شعبہ میں فراخ دلانا مراعات بلاسود قرضوں کی فراہمی اور کھادوں،بیج،زرعی آلات اور دیگر اشیاء پر خاطر خواہ سبسڈی جیسے دورس اقدامات چھوٹے کسانوں اور زمینداروں کے روشن معاشی مستقبل کی نوید ثابت ہوں گے۔

مزید :

رائے -کالم -