رکشہ میں بیٹھی طالبہ کو موبائل فون پر بات کرنے پر  ڈرائیور نے قتل کر دیا

رکشہ میں بیٹھی طالبہ کو موبائل فون پر بات کرنے پر  ڈرائیور نے قتل کر دیا
رکشہ میں بیٹھی طالبہ کو موبائل فون پر بات کرنے پر  ڈرائیور نے قتل کر دیا

  

لکھنو (ویب ڈیسک) بھارت میں رکشہ ڈرائیور نے موبائل پر بات کرنے والی مسافر لڑکی کو آہنی راڈ کے وار سے قتل کر دیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق واقعہ ریاست اترپردیش میں پیش آیا جہاں رکشہ میں بیٹھی طالبہ کو بے رحم ڈرائیور نے موت کے گھاٹ اتار دیا۔20سالہ آفرین بھائی نوید کے ہمراہ ٹیوشن کلاس کے لیے جارہی تھی کہ آدھے راستے میں بھائی نے اسے رکشے میں بٹھایا۔رکشہ اپنی منزل کی جانب رواں دواں تھا کہ راستے میں ڈرائیور اور طالبہ میں کسی بات کو لے کر تلخ کلامی ہوئی، لڑکی مسلسل موبائل پر بات کررہی تھی جس پر ڈرائیور طیش میں آگیا اور اس نے لوہے کا راڈ سر پر دے مارا۔

بھائی نوید کا کہنا ہے کہ اسے واقعے کی اطلاع دی گئی تو جب وہ اسپتال پہنچا تو بہن زندگی کی بازی ہار چکی تھی، ڈرائیور قتل کو ٹریفک حادثے کا رنگ دینا چاہ رہا تھا جب پولیس نے اسے گرفتار کیا تو اس نے اعتراف جرم کر لیا۔

مزید :

بین الاقوامی -