تیرا خیال بہت دیر تک نہیں رہتا | نون میم دانش |

تیرا خیال بہت دیر تک نہیں رہتا | نون میم دانش |

  

ترا خیال بہت دیر تک نہیں رہتا

کوئی ملال بہت دیر تک نہیں رہتا

اداس کرتی ہے اکثر تمہاری یاد مجھے

مگر یہ حال بہت دیر تک نہیں رہتا

میں ریزہ ریزہ تو ہوتا ہوں ہر شکست کے بعد

مگر نڈھال بہت دیر تک نہیں رہتا

جواب مل ہی تو  جاتا ہے ایک چپ ہی نہ ہو

کوئی  سوال بہت دیر تک نہیں رہت

میں جانتا ہوں کہ سورج ہوں ڈوب جاؤں بھی تو

مجھے زوال بہت دیر تک نہیں رہتا

شاعر:نون میم دانش

(شعری مجموعہ:بچے، تتلی، پھول؛سالِ اشاعت،1997 )

Tira   Khayaal   Bahut   Dair   Tak   Nahen   Raha

Koi   Malaal   Bahut   Dair   Tak   Nahen   Raha

 Udaas   Karti   Hay   Aksar   Tumhaari   Yaad   Mujhay

Magar   Yeh   Haal   Bahut   Dair   Tak   Nahen   Raha

 Main   Raiza   Raiza   To   Hota   Hun   Kar   Shikast   K   Baad 

Magar    Nidhaal   Bahut   Dair   Tak   Nahen   Raha

 Jawaab   Mill   Hi   To   Jaata   Hay   Aik   Chup   Hi   Na   Ho

Koi   Sawaal   Bahut   Dair   Tak   Nahen   Raha

 

Main   Jaanta   Hun   Keh   Sooraj   Hun   Doob   Jaaun   Ga

Mujhay   Zawaal   Bahut   Dair   Tak   Nahen   Raha

Poet: Noon   Meem   Danish

 

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -