نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن کو زندگی کی بڑی کامیابی مل گئی

نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن کو زندگی کی بڑی کامیابی مل گئی
نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن کو زندگی کی بڑی کامیابی مل گئی
کیپشن:    سورس:   Instagram

  

ویلنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن کی پارٹی نے دوسری بار الیکشن میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل کرلی۔

کرائسٹ چرچ میں دہشتگرد حملے کے بعد ایک عالمی رہنما کے طور پر ابھر کر سامنے آنے والی نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن نے کورونا بحران کو بھی کامیابی سے قابو کیا اور نیوزی لینڈ کو سب سے پہلے اس بیماری پر قابو پانے والا ملک بنادیا۔

ہفتہ کے روز جیسنڈا آرڈرن کی بائیں بازو کی جماعت لیبر پارٹی نے عام انتخابات میں 64 نشستیں حاصل کرکے تاریخ رقم کی ہے۔ انہیں 50 فیصد سے زائد ووٹ پڑے اور وہ اس قابل ہوگئی ہیں کہ کسی اتحادی کو شامل کیے بغیر ہی حکومت قائم کرسکیں۔ ایسا 1996 کے بعد پہلی بار ہوا ہے کہ کسی پارٹی کواتنی واضح اکثریت ملی ہو۔

ان کی مخالف جماعت نیشنل پارٹی کو صرف 35 نشستیں ملی ہیں جو کہ 2017 کے انتخابات کے مقابلے میں 21 سیٹیں کم ہے۔ نیوزی لینڈ میں 120 ارکان کی پارلیمنٹ میں حکومت بنانے کیلئے 61 نشستیں چاہیے ہوتی ہیں لیکن جیسنڈا آرڈرن کو 64 نشستیں حاصل ہوگئی ہیں۔

یہاں یہ بھی واضح رہے کہ جیسنڈا آرڈرن نیوزی لینڈ کی 40 ویں وزیر اعظم ہیں۔ نیوزی لینڈ دنیا کا پہلا ملک تھا جس نے سنہ 1893 میں خواتین کو ووٹ کا حق دے دیا تھا۔

مزید :

بین الاقوامی -