مہنگائی کا نیا سونامی‘ شہر شہر مظاہرے‘ حکومت پر کڑی تنقید

مہنگائی کا نیا سونامی‘ شہر شہر مظاہرے‘ حکومت پر کڑی تنقید

  

ملتان + صادق آباد+ کوٹ ادو + کرم پور + بہاولپور (خصوصی رپورٹر + تحصیل رپورٹر+ نمائندہ پاکستان + بیورو رپورٹ)  مرکزی تنظیم تاجران پاکستان کے ضلعی صدر جعفر علی شاہ نے حکومت کی جانب سے پٹرول، ڈیزل، گھی،گیس اور بجلی کے نرخوں میں تاریخی اضافے کو مسترد کرتے  ہوئے کہا ہے کہ اس سے مہنگائی کا طوفان آئے گا،عوام پہلے ہی مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں حکومت نے عوام پر مہنگائی کا نیا بم گرا دیا ہے، آئی ایم ایف کے ایما پر تاریخی مہنگائی کی جا رہی ہے  عوام اور معیشت کو قربان کیا جا رہا ہے بجلی،گیس، پیٹرول اور گھی کی قمیتوں میں اضافہ کر کے گردشی قرضہ دوگنا ہونا حکومت کی نااہلی کی انتہا ہے تاجر برادری حکومت کی مسلط کردہ ظالمانہ مہنگائی اور ٹیکسسز کو مسترد کرتی  حکومت ہوش کے ناخن لیتے ہوئے مہنگائی کو کنٹرول کرے ورنہ حالات کی ذمہ دار ی حکومت کی ہو گی اور تاجر برادری ملک گیر احتجاج پر مجبور ہوجائے گی۔  دریں اثناء چیمبر آف سمال ٹریدرزکے وائس چیرمین، صدرموٹر ڈیلرز ایسوسی ایشن کے صدر ملک آفتاب اعوان نے حکومت کی جانب سے پٹیرول، ڈیزل، گھی،گیس اور بجلی کے نرخوں میں تاریخی اضافے کو ظالمانہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے مہنگائی کا طوفان آئے گا،عوام پہلے ہی مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں حکومت نے عوام پر مہنگائی کا نیا تازیانہ برسا دیا ہے،انہوں نے مزید کہا کہ آئی ایم ایف کے ایما پر تاریخی مہنگائی کی جا رہی ہے،آئی ایم ایف کی قربان گاہ پر عوام اور معیشت کو قربان کیا جا رہا ہے عمران خان کی حکومت عوام کو ووٹ دینے کی سزا دے رہی ہے جبکہ بجلی،گیس، پیٹرول اور گھی کی قمیتوں میں اضافہ کر کے گردشی قرضہ دوگنا ہونا حکومت کی نااہلی کی انتہا ہے،عوام حکومت کے ظالمانہ مہنگائی اور ٹیکسسز کو مسترد کرتی ہے امس لئے حکومت ہوش کے ناخن لیتے ہوئے مہنگائی کو کنٹرول کرے ورنہ حالات کی ذمہ دار ی حکومت کی ہو گی تاجران حکومت کے اس فیصلے کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے مطالبہ کرتے ہں کی فی الفور عوام کی بھلائی کے لئے مہنگائی کو کنٹرول کرتے ہوئے قیمتں کم کی جائے ورنہ احتجاج پر مجبور ہوں گے۔ صادق آباد سے تحصیل رپورٹر کے مطابق پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کی شدید مذمت کرتے ہیں،مہنگائی نے عوام کی چیخیں نکلوا دیں ہیں سونامی کا عذاب عوام کو خودکشیوں کو مجبور کررہا ہے نئے پاکستان کی بجائے پرانا پاکستان عوام کے لئے بہتر تھا موجودہ حکومت نے مہنگائی کے تمام ریکارڈ توڑ دیئے ہیں ان خیالات کا اظہار جمعیت علمائے اسلام کے زیر اہتمام پریس کلب صادق آباد کے باہر ہونے والے احتجاج سے مظاہرین جمعیت علمائے اسلام کے رہنماؤں مولانا قاری شاہد محمود رحیمی،حافظ سعید مصطفی چدھڑ،مولانا سعد الرحمان مدنی،مولانا طاہر محمود،قاری عبید اللہ،مفتی محمد یونس،اکبر خان پٹھان،مولانا عبدالمجید حیدری،مولانا قاری سیف اللہ خالد ودیگر مظاہرین نے خطاب کرتے ہوئے کیا احتجاجی مظاہرین نے مہنگائی کیخلاف احتجاج کرتے ہوئے کہاکہ مہنگائی کا طوفان عوام پریشان ہیں،سلیکٹیڈ اور نااہل حکومت فوری طور پر مستعفی ہوکر گھر چلے جائے اور پاکستان میں نئے سرے سے صاف اور شفاف انتخابات کروائے جائیں تاکہ عوام کے حقیقی نمائندے عوام کی خدمت کر سکیں انہوں نے مزید کہا کہ حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ کر کے غریبوں کو مزید پریشان کردیا ہے،انہوں نے کہاکہ حکومت ہر روز بجلی،گیس،پٹرولیم،زرعی ادویات،گھی،چینی اور ضروریات زندگی کی دیگر اشیاء میں ٹیکسوں کے ذریعے بے تحاشہ اضافہ کر کے عوام کو لوٹ رہی ہے حکومت ایک طرف عوام کو دھوکہ دینے کے لئے ریلیف کا اعلان کرتی ہے تو دوسرے دن عوام کی کمر میں مہنگائی کا چھرا گھونپ کر ان کو تباہ و برباد کررہی ہے،سلیکٹیڈ حکومت آئی ایم ایف کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہے جس کے باعث ملک میں ہر ہفتے مہنگائی کا طوفان آرہاہے جس کے باعث عوام کی قوت خرید کم اور حکمرانوں کی عیاشیوں میں اضافہ ہورہاہے۔ کوٹ ادو سے تحصیل رپورٹر کے مطابق شہریوں نے پٹرولیم مصنوعات سمیت بجلی،گھی کی قیمتوں میں اضافہ مسترد کرتے ہوئے اسے فوری واپس لینے کا مطالبہ کردیاہے،شہریوں طلحہ رحمانی نے کہا ہے تیل کی قیمتوں میں اضافہ وزیراعظم اوراوگرا کی ملی بھگت ہے، ملک چلانا اس نااہل اور نالائق ٹولے کے بس کی بات نہیں، اب حکومت بتائے پٹرول کی مد میں پیسے کیا وزیراعظم کے جیب میں جا رہے،تباہی سرکار آئی ایم ایف کیساتھ ملکرہر روزمنی بجٹ پیش کر رہی، نوشاد ہاشمی نے کہا پٹرول قیمتوں میں ظالمانہ اضافے سے عوام معاشی بدحالی کا شکار ہونگے،عمران خان اینڈ کمپنی ملک اور عوام کیلئے ناقابل برداشت بوجھ بن گئے،محنت کش امیر بخش نے کہا وفاقی حکومت پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں عیارانہ اضافہ کرتی ہے، حکمرانوں کو عوام سے کوئی سروکار نہیں،خدارا عوام کے غیض و غضب سے بچیں اور اضافہ فی الفور واپس لیں، طارق اسماعیلنے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ مسترد کرتے ہوئے اسے ظلم و زیادتی قرار دیا ہے، غلام عباس نے کہا کہ حکومت آئی ایم ایف کے سامنے مکمل سرنگوں ہو چکی اور اسے مہنگائی کے مارے عوام کی بے بسی کا کوئی احساس نہیں، انہوں نے مطالبہ کیا حکومت اضافہ فوری واپس لے اور دیگر اشیا ئے ضروریہ کی قیمتیں بھی کم کی جائیں،چوہدری یونس نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ واپس لینے کا مطالبہ کردیا، محمد یاسر چوہدری نے کہا کہ پٹرول قیمتوں میں اضافہ بدترین ظلم اور زیادتی ہے،موجودہ نااہل حکومت عوام کو فاقہ کشی پر مجبور کررہی، ہر شعبے کا بیڑا غرق کرنے کے بعدبھی عوام پر آئے روز معاشی بم گرائے جارہے، جو کسی صورت قابل قبول نہیں،محمد منیررحمانی کا کہنا تھا حکومت خزانہ بھرنے کیلئے مہنگائی کر نے کی بجائے اپنے اخراجات کم کر نے کیساتھ کرپشن کا خاتمہ کر کے عوام کو ریلیف دے،قاری وقار الحسن چودھری نے کہا حکومت عوام کی توقعات کیخلاف کام کر رہی ہے۔کرم پور سے نمائندہ پاکستان کے مطابق تازہ مزدوری کرنے والے محمد اشرف،غلام حسین، نوید احمد،سرفراز سیاگ،محمد اجمل۔قمر زمان،شاہ محمد،در محمد،حبیب اللہ،آفتاب احمد اور دیگر نے کہاکہ حکومت نے گھی کی قیمت میں 109 روپے فی کلو اضافہ کر دیا۔حکومت نے ایک بار پھر عوام دشمن فیصلہ کر لیا۔ یوٹیلٹی سٹور پر مختلف برانڈز کے گھی کی قیمتوں میں 40 سے 1090 روپے تک کا اضافہ کر دیا گیا ہے۔اس حوالے سے نوٹیفیکیشن بھی جاری کر دیا گیا ہے جس کا اطلاق فوری ہو گا۔ یوٹیلٹی سٹورز پر ملنے والے گھی کی فی کلو قیمت میں 109 روپے اور 10لیٹر کین میں 1090 روپے کا ہوشربا اضافہ کیا گیا ہے۔جس کے بعد ڈالڈا گھی کا 10 لیٹر کین 2500 روپے بڑھ کر 3590 روپے کا ہو گیا۔اسی طرح میزان گھی کے 10 لیٹر ٹن کی قیمت میں 475 روپے کا اضافہ کیا گیا۔جس کے بعد میزان گھی کے 10 لیٹر ٹن کی قیمت 2885 سے بڑھا کر 3360 روپے مقرر کی گئی۔یوٹیلٹی سٹورز پر 5 لیٹر کوکنگ آئل کی قیمت میں 463 روپے کا اضافہ کیا گیا جب کہ من پسند کوکنگ آئل کی قیمت 465 روپے تک بڑھا دی گئی ہے جس کے بعد من پسند 5 لیٹر کوکنگ آئل ٹن کی قیمت 1245 سے بڑھ کر 1710 روپے ہو گئی ہے۔دوسری جانب بجلی کی قیمت میں ایک ر وپے 68پیسے اضافہ کی منظوری دیدی گئی۔ ذرائع کے مطابق بجلی کی قیمت میں ایک روپے 68 پیسے اضافہ کیا گیا ہے، وفاقی کابینہ نے سرکولیشن سمری کے ذریعے بجلی مہنگی کرنے کی منظوری دی،بجلی کی قیمت میں اضافے کا اطلاق یکم اکتوبر سے ہو گا، بجلی کی قیمتوں میں اضافے کی سمری وزارت توانائی کی جانب سے بھجوائی گئی تھی،نیپرا نے گزشتہ مالی سال کے نقصانات پورا کرنے کیلئے سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ کی مد میں اضافے کی منظوری دی تھی،نیپرا نے گردشی قرض کے خاتمے کیلئے سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ کی مد میں ایک روپے 68 پیسے فی یونٹ وصولی کی اجازت دی تھی،صارفین سے یہ وصولی ایک سال کیلئے کی جائے گی جبکہ حکومت نے پٹرولیم مصنوعات میں بھی 12روپے روپے تک اضافہ کر دیا ہے جس سے مہنگائی کا ایک نیا طوفان آئے گا۔ غریب آدمی جائے تو کہاں جائے۔ ہم 500سے لیکر 800روپے تک کماتے ہیں جس سے شام کی روٹی بھی بمشکل پکتی ہے۔ حکومت روز مرہ اشیاء کو کنٹرول کرے۔او ر لوگوں کو خود کشیوں سے بچائے۔ بہاول پور سے بیورورپورٹ کے مطابق عوامی نیشنل پارٹی بہاول پورکامہنگائی کے خلاف پریس کلب تایونیورسٹی چوک احتجاج' احتجاجی مظاہرین نے پلے کارڈزاٹھارکھے تھے جس پر حکومت مخالف نعرے درج تھے تفصیل کے مطابق گذشتہ روز عوامی نیشنل پارٹی بہاول پور نے مہنگائی کے خلاف پریس کلب بہاول پور سے یونیورسٹی چوک احتجاج کیا اس موقع پرعوامی نیشنل پارٹی بہاول پورکی مرکزی جوائنٹ سیکریٹری عابدہ خان نے خواتین کے جلوس کی قیادت سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ چینی بجلی گیس کی قیمتوں میں اضافہ سے غریب کی مشکلات میں روزبروز اضافہ ہوتاجارہاہے لوگ ایک وقت کی روٹی کوترس گئے ہیں ملک قرضوں میں ڈوب چکاہے ہرطرف بھو ک ننگ سے معیشت تباہ ہوچکی ہے آٹے چینی گھی پیٹرول اوربجلی کی قیمتوں میں اضافہ نے غریب کی مشکلات میں اضافہ کردیاہے لوگوں کے پاس مہنگائی زدہ ماحول سے پریشان حال عوام حکومت وقت سے رحم کی اپیل کررہی ہے سابق حکمرانوں کی ناقص پالیسی کی تکرارکرنے والے موجودہ حکمرانوں نے عوام کاکچومرنکال دیاہے کیایہی مدینہ کی ریاست ہے کہ غریب کے پاس ادویات خریدنے کے لئے پیسے تک نہیں ہیں۔۔۔ بہاول پور(بیورورپورٹ) ملک بھرکے وکلا تماشائی نہ بنیں بصورت دیگر ملک کوناقابل تلافی نقصان پہنچنے کااندیشہ ہے خان محمدحسین آزاد ایڈوکیٹ سابق صدر ہائی کورٹ باربہاول پور نے ایک خط یاداشت کے زریعے پاکستان بارکونسل کوتحریری طورپر آگاہ کیا جس میں کہاگیا کہ اپوزیشن نے اپناموثررول ادانہیں کیا اس لئے مصلحت پسنداپوزیشن نے بھی حکومت کے اقتدارکودوام بخشاہے اس لئے ایسی مصلحت پسندانہ اپوزیشن سے عوام کااعتماداٹھ چکاہے عوام کی نظریں اب وکلا پر لگی ہوئی ہیں اگر پاکستان بارکونسل اورسپریم کورٹ بارایسوسی ایشن اوردیگرصوبائی بارکونسلز نے اپناقانونی آئینی کردارادانہ کیا تو ملک کو ناقابل تلافی نقصان پہنچنے کااندیشہ ہے۔

مزید :

صفحہ اول -