امریکی سربراہی میں یوکرائن میں جنگی مشقوں کا آغاز

امریکی سربراہی میں یوکرائن میں جنگی مشقوں کا آغاز

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 کیف (آن لائن)سیاسی بحران کے شکار یورپی ملک یوکرائن میں فوجی مشقوں کا آغاز ہو گیا ہے۔ یہ جنگی مشقیں امریکی سربراہی میں کی جا رہی ہیں، غیر ملکی خبر رسا ں ادارے کے مطا بق کیف میں مغرب نواز حکمرانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے امریکی سربراہی میں 15 ممالک کی افوج نے ملک کے مغربی شہر لوِی±و کے قریب واقع یاووریف فومی مرکز پر ان 11 روزہ جنگی مشقوں کا آغاز کیا ہے۔
 یہ علاقہ تنازعے کے شکار شہر ڈونیٹسک سے 1000 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے۔ ان مشقوں کو ’ریپِڈ ٹرائیڈنٹ 14‘ کا نام دیا گیا ہے۔توقع کی جا رہی ہے کہ امریکا اپنے 200 فوجی یوکرائن بھیجے گا۔ رواں برس اپریل میں شروع ہونے والی روس نواز بغاوت کے بعد سے امریکا کی یوکرائن میں پہلی فوجی تعیناتی ہے۔یوکرائنی وزیر دفاع کی طرف سے گزشتہ روز بتایا گیا تھا کہ مغربی دفاعی اتحاد نیٹو کے رکن ممالک یوکرائن کو ہتھیار بھی بھجوا رہے ہیں۔ قبل ازیں اس بات کی تردید کی جاتی رہی ہے۔امریکی فوج کے مطابق 26 نومبر تک جاری رہنے والی فوجی مشقوں میں نیٹو اتحاد کی رکن 12 ریاستوں کے قریب 1300 فوجی حصہ لے رہے ہیں۔ ان میں جرمنی، برطانیہ پولینڈ، لیتھوانیا، اور کینیڈا بھی شامل ہیں۔ اس کے علاوہ آذربائیجان، جارجیا اور مالدووا جو نیٹو کے رکن نہیں ہیں ان کے فوجی بھی ان مشقوں میں شریک ہیں۔جرمن خبر رساں ادارے ڈی پی اے کے مطابق امریکی فوج کے بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ یہ جنگی مشقیں یوکرائن حکومت کی درخواست پر کی جا رہی ہیں۔
 

ž ‹ é ƒœ’„  ‡Ž ž’… ¤’¢’¤ ¤“  œ ŸŽ  ˜¤Ÿ žŽ‰Ÿ  œ¥ ˜ Ÿ¤¡ —¦Ž ¦
ž ‹  ₤¢Ž¢Žƒ¢Ž…á ƒœ’„  ‡Ž ž’… ¤’¢’¤ ¤“  ‚Ž– ¤¦ œ¥ ‡¢£ … ’¤œŽ…Ž¤ ™žŸ ‰’¤   ¥ ’¤ £Ž ”‰š¤ Ž¢ Ÿ¦ ƒœ’„  œ¥ ‚¤¢ Ž¢ˆ¤š ŸŽ  ˜¤Ÿ žŽ‰Ÿ  œ¥ ˜ Ÿ¤¡ ƒŽ„œžš —¦Ž ¦ œ ¦„ŸŸ œ¤ Ÿž›„ Ÿ¤¡ ‚¦Ÿ¤ ‹žˆ’ƒ¤ œ¥ Ÿ¢Ž ’Ÿ¤„ „Žœ¤  ¢–  œ¥ Ÿ’£ž ƒŽ ‚§¤ „‚‹ž¦ Š¤ž œ¤ ¤ ™žŸ ‰’¤   ¥ Ž¢ Ÿ¦ ƒœ’„  œ¥ ‚¤¢Ž¢ ˆ¤š ŸŽ  ˜¤Ÿ žŽ‰Ÿ  œ¤ “ ‹Ž ”‰š„¤ Š‹Ÿ„ ƒŽ  ¦¤¡ ŠŽ‡ „‰’¤  ƒ¤“ œ¤ ó

مزید :

عالمی منظر -