فلمسٹار میرا اور خاتون اول؟

فلمسٹار میرا اور خاتون اول؟
فلمسٹار میرا اور خاتون اول؟
کیپشن: 1

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

فلمسٹار میرا عمران خان کے ساتھ شادی کرنے کے لئے ہی سنجیدہ نہیں ہو گئی ہیں ،بلکہ انہوں نے اپنے خلوص اور محبت کا یقین دلانے کے لئے دھرنے میں شرکت کرنے کا بھی اعلان کیا ہے۔ میرا کے اس اعلان کو چند دن گزر چکے ہیں تاحال وہ عمران خان کے دھرنے میں نظر نہیں آئی ہیں، لیکن وہ کسی بھی روز تحریک انصاف کے دھرنے میں جلوہ افروز ہو سکتی ہیں۔ میرا کو عمران خان سے شادی کرنے کا آئیڈیا دبئی میں ایک رپورٹر نے دیا تھا۔ اس وقت بھی میرا نے کہا تھا کہ اگر عمران خان انہیں شادی کے لئے پرپوز کریں گے تو وہ اسے قبول کر لیں گی۔ میرا کی قابل اعتراض حرکات اکثر میڈیا کی خبروں کا حصہ بنتی رہتی ہیں۔ کچھ عرصہ قبل ان کی ایک ویڈیو بھی منظر عام پر آئی تھی جس میں وہ ایسی حرکات کرتی پائی گئیں جو عام طور پر شادی شدہ لڑکیاں پردے کے پیچھے اپنے شوہر کے ساتھ کرتی ہیں۔
میرا کے اس انکشاف سے واضح ہوا ہے کہ محض عمران خان ہی وزیراعظم بننے کے خواب نہیں دیکھ رہے ہیں، بلکہ ان کے ساتھ بہت سی خواتین نے خاتون اول بننے کے خواب دیکھنا شروع کر دیئے ہیں۔ایک مرتبہ برنارڈ شا کو برطانیہ کی ملکہ حسن نے خط لکھا کہ اگر وہ ان سے شادی کر لیں تو ان کے بچے خوبصورت ترین اور ذہین ترین ہوں گے۔ برنارڈشا کی ذہانت کو تو ایک دنیا مانتی اور جانتی ہے، مگر وہ کوئی خوبصورت شخص نہیں تھے۔ انہوں نے جواب میں لکھا ”یہ بھی ہو سکتا ہے کہ ان کی صورت میری جیسی ہو اور عقل آپ جیسی ہو“۔
خواب دیکھنے پر کوئی پابندی نہیں ہوتی۔ اگر عمران خان کے وزیراعظم بننے کے خواب پر اعتراض نہیں کیا جا سکتا تو میرا کے خاتون اول بننے کی خوہش بھی قابل اعتراض حرکات کے زمرے میں نہیں آ سکتی۔ پاکستان میں ہر چیز کے پیچھے سازش تلاش کرنے کا کلچر ہے۔ بہت سے لوگ جاوید ہاشمی کی بغاوت کے پیچھے بھی سازش تلاش کرنے میں مصروف ہیں۔ وہ اس حقیقت پر توجہ دینے کے لئے تیار نہیں ہیں کہ ہاشمی صاحب کا ضمیر کچھ زیادہ ہی باغی ہے اور وہ اکثر اس کے ہاتھوں مجبور ہو کر بغاوت کرنے پر تیار ہو جاتے ہیں۔ وہ باغوں میں پھرنے والے باغی نہیں ہیں، بلکہ وہ ایسے باغی ہیں جنہوں نے پاکستان میں اس لفظ کو ایک غیر معمولی احترام سے روشناس کرایا ہے۔
میرا نے عمران خان کو شیروانی سلوانے کے لئے دبئی کے ایک ڈیزائنر کا نام بھی تجویز کر دیا ہے، مگر خان صاحب نے چند روز قبل کہا تھا کہ وہ سیاست میں فصلی بٹیروں کو پسند نہیں کرتے۔ وہ ان کی قدر کرتے ہیں جو مشکل وقت میں ان کے ساتھ کھڑے رہتے ہیں۔ عمران خان کے دھرنے میں بہت سے ایسے خوبصورت چہرے بھی مسلسل کھڑے نظر آتے ہیں جو ان کے ایک اشارے پر ان سے شادی کرنے کے لئے تیار ہو سکتے ہیں اور اس سلسلے میں ذات پات، عمر اور ایسی تمام رکاوٹوں کو ایک ٹھوکر سے توڑنے کا حوصلہ رکھتے ہیں۔ ایسی صورت میں ہم میرا کے ساتھ ہمدردی تو کر سکتے ہیں، مگر انہیں یہ جھوٹی تسلی نہیں دے سکتے کہ عمران خان کسی بھی صورت میں ان کے ساتھ شادی کرنے پر تیار ہوں گے۔
میرا شادی نما حرکتیں کرنے کی وجہ سے اتنی بدنام ہو چکی ہیں کہ اب ان کے ساتھ کوئی ایسا شخص ہی شادی کرسکتا ہے جو بدنام ہونے کے شوق میں مبتلا ہو۔ عمران خان اپنی زندگی کے اس مقام پر ہیں جہاں ان کی ہر حرکت تاریخ کا حصہ بن رہی ہے۔ عمران خان اب سیاست کے عشق میں مبتلا ہو چکے ہیں اور وہ ہر روز اپنی منزل وزیراعظم ہا¶س کو ذوق و شوق سے دیکھتے ہیں۔ جب کسی سیاسی لیڈر کو وزیراعظم ہا¶س اتنا قریب نظر آ رہا ہو تو وہ میرا جیسی لڑکی، بلکہ اب باقاعدہ خاصی بڑی عورت کو کیسے دیکھ سکتے ہیں۔ عمران خان باقاعدہ شادی کر چکے ہیں، مگر ان کے ساتھ ہمہ وقت رہنے والے شیخ رشید نے تو تائب ہونے کے لئے بھی شادی نہیں کی۔ شیخ رشید بہرحال شیخ ہیں وہ گھاٹے کا سودا کیسے کر سکتے ہیں خواہ یہ شادی کا سودا ہی کیوں نہ ہو۔ کہا جاتا ہے کہ عمران خان کے کان میں وہ ہمہ وقت صرف یہ ہی کہتے رہتے ہیں ”دیکھو دیکھو وزیراعظم ہا¶س دیکھو“۔۔ حکومت عمران خان کے ساڑھے پانچ مطالبات قبول کر چکی ہے ،مگر عمران خان کو اب وزیراعظم ہا¶س دیکھنے کی عادت پڑ گئی ہے۔اس لئے وہ دھرنا ختم کرتے نظر نہیں آتے۔ انہوں نے خود کہا تھا کہ وہ طارق بن زیاد ہیں جس نے اپنی کشتیاں جلا دی تھیں۔ تاریخ اسپین کے اس عظیم مسلم فاتح کے کشتیاں جلانے کا تذکرہ تو کرتی ہے ،مگر ان ہزاروں، بلکہ لاکھوں لوگوں کو مسلسل نظر انداز کر رہی ہے جو اپنی کشتیاں جلانے کے بعد مانگ تانگ کر کرایہ اکٹھا کرکے کسی دوسری کشتی میں واپس گئے تھے۔
عمران خان نے کچھ عرصہ قبل خود ایک جلسے میں نیا پاکستان بننے کے بعد شادی کرنے کی خواہش کا اظہار کیا تھا،مگر ان کی بہت سی خواہشیں پورا ہونے سے انکار کر چکی ہیں۔ ان کی جمائما سے شادی کامیاب ہونے کی خواہش پوری نہیں ہوئی تھی۔ دھرنے میں دس لاکھ افراد اکٹھے کرنے کی خواہش پوری نہیں ہوئی۔ زور دار آوازیں دینے اور کئی مرتبہ چلانے کے باوجود دھرنے کے شرکاءکی تعداد ہزاروں میں ہی رہی، بلکہ حالیہ دھرنے میں علامہ طاہر القادری ان سے بڑے لیڈر بن کر سامنے آئے ہیں اور کہا جاتا ہے کہ عمران خان دھرنے سے اٹھ بھی جائیں تو طاہر القادری برسوں دھرنا جاری رکھ سکتے ہیں، لیکن اگر طاہرالقادری دھرنا ختم کرنے کا اعلان کر دیں تو عمران خان کا دھرنا باقاعدہ ایک مذاق بن جائے گا۔
میاں نواز شریف عمران خان کے لئے وزارت عظمیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دیتے ہوئے نظر نہیں آتے، تاہم فلمسٹار میرا ان سے شادی کے لئے آمادہ ہیں، مگر عمران خان کے لئے وزارت عظمیٰ کو نظرانداز کرکے میرا کے ساتھ شادی کرنے کا خواب دیکھنا بھی خاصا مشکل نظر آتا ہے۔ انہوں نے جب دھرنے میں شادی کرنے کا اعلان کیا تھا تو ان کے سان و گمان میں بھی نہیں ہوگا کہ ان کے ساتھ شادی کرنے کے لئے میرا ان کے دھرنے میں آنے کا اعلان کر دیں گی۔ ہو سکتا ہے کہ اس کالم کی اشاعت تک میرا بھی عمران کے ساتھ شامل ہو کر دھرنے کی کامیابی کا اعلان کر رہی ہوں۔

مزید :

کالم -