بجلی کے زائدبلوں کی وجہ سے عوام اور کاروباری طبقہ پریشان ہے: صدر راولپنڈی چیمبر

بجلی کے زائدبلوں کی وجہ سے عوام اور کاروباری طبقہ پریشان ہے: صدر راولپنڈی ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


راولپنڈی ( کامرس ڈیسک)راولپنڈی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسڑی کے صدر ڈاکٹر شمائل داﺅد آرائیں نے عوام کو بجلی کے زائد بل موصول ہونے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پوشیدہ ٹیکسوں کے نفاذ اور یونٹس کی رعایتی سلیب کو 300یونٹ سے 200یونٹ کرنے سے مذکورہ مسئلہ پیدا ہوا ہے ،کاروباری برادری اور عوام شدید پریشانی کا شکار ہیں حکومت کو چاہیے کہ صورتحال کا نوٹس لے اور معاملات کو حل کرے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے چیمبر میں تاجروں و صنعتکاروں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔ اسموقع پر سینئر نائب صدر ملک شاہد سلیم، نائب صدر محمد عالم چغتائی اور دیگر اراکین بھی موجود تھے۔

ڈاکٹر شمائل داﺅد نے کہا کہ راولپنڈی چیمبر نے ہمیشہ ڈائریکٹ ٹیکسیشن کی بات کی اور ہر فورم پر اس ایشو کو اٹھایا تا کہ عوام میں آگاہی پیدا ہو اور انہیں یہ یقین ہو کہ انکی خون پسینے کی کمائی کو عوامی بہبود پر خرچ کیا جا رہا ہے ، مخفی ٹیکسوں سے عوام کے اندر بے چینی پیدا ہوتی ہے اور وہ ٹیکس چوری کی طرف مائل ہوتے ہیں ، حکومت نے بغیر کسی پیشگی اطلاع اور کسی نئے ٹیکس کے اطلاق کے بجلی کے اضافی بل بھیج دئے ہیں اور یہ کسی ایک ریجن میں نہیں بلکہ مجموعی طور پر پورے ملک میں کیا گیا جس کے پیچھے خاص عوامل درکار ہو سکتے ہیں ۔صدر آر سی سی آئی نے کہا کہ مہنگائی میں ہوش ربا اضافہ ہو چکا ہے ، اشیاءروزمرہ عوام کی پہنچ سے دور جا چکی ہیں ان حالات بجلی کے زائد بلوں کا موصول ہونا انتہائی کرب کا باعث ہے ،عوام دو وقت کی روٹی کو ترس رہے ہیں اور سفیدپوش طبقہ بڑی مشکل سے اپنا بھر م قائم رکھ پا رہا ہے ، ، راولپنڈی چیمبر حکومت سے معاملے کی فوری انکوائری اور ذمہ داران کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کرتا ہے ۔

مزید :

کامرس -