جعلی ڈگری کا انکشافہونے پر جعلسازوں پر مقدمہ درج کرنے کی سفارش

جعلی ڈگری کا انکشافہونے پر جعلسازوں پر مقدمہ درج کرنے کی سفارش

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

(لاہور(اپنے نمائندے سے)ڈسٹرکٹ سیٹلمنٹ آفیسر لاہور کے پاس جعلی رجسٹری کی بنیاد پر ڈگری کے ذریعے عمل درآمد کروانے کےلئے آنیوالے جعلساز پھنس گئے،رجسٹری جعلی ہونے کے انکشاف پر ڈسٹرکٹ سیٹلمنٹ آفیسر نے مذکورہ ملزمان کے خلاف مقدمہ کے اندراج کے کی سفارش کرتے ہوئے بوگس دستاویز کو محکمہ اینٹی کرپشن کے حوالے کر دیا ،روزنامہ پاکستان کو ملنے والی معلومات کے مطابق ڈسٹرکٹ سیٹلمنٹ آفیسر لاہو ر رانا خالد محمود کے پاس ملک سرفراز احمد ولد جلال دین درخواست دیتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ اس کی رجسٹری دستاویزنمبر 2582 بہی نمبر1جلد نمبر 2067مورخہ 04-06-1997سانحہ ضلع کچہری آتشزدگی سے پہلے کی تصدیق ہونا پائی ہے لہذا عدالتی ڈگری کے مطابق موضع سندر کے ریونیو ریکارڈ میں عمل درآمد کیا جائے جس پر ڈسٹرکٹ سیٹلمنٹ آفیسر نے جب چھان بین کی اور خزانہ برانچ سے اسٹام پیپرز کی تصدیق کروائی تو معلوم ہوا کہ رجسٹری دستاویزات جعلی اور بوگس تیار کروائی گئی ہے جس میں تحریر اندراجات بھی خلاف قوائد اور خود ساختہ تھی جس پر ڈسٹرکٹ سیٹلمنٹ آفیسر نے مذکورہ ملزمان، رپوٹس ،ریونیو سٹاف سمیت دیگر ملزمان کا تعین کرنے کے لئے مقدمہ کی سفارش کرتے ہوئے کیس اینٹی کرپشن کے حوالے کر دیا ہے ڈائریکٹر انٹی کرپشن کا کہنا ہے کہ تحقیقات کی جارہی ہیں اصل ذمہ داران کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔