تحفظ ماحولیات قانون کی خلافورزی،حنا پرویز کی اسمبلی میں تحریک التواء جمع

تحفظ ماحولیات قانون کی خلافورزی،حنا پرویز کی اسمبلی میں تحریک التواء جمع

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(خبر نگار) مسلم لیگ(ن) کی رکن صوبائی اسمبلی حنا پرویز بٹ نے تحفظ ماحول کیلئے حکومت کے پاس کردہ قانون تحفظ ماحولیات 1997ء پاکستان کی کھلم کھلا خلاف ورزی پر پنجاب اسمبلی میں تحریک التوائے کار جمع کرا دی رکن صوبائی اسمبلی نے اپنی تحریک میں کہا ہے کہ صوبہ بھر میں تحفظ ماحول کیلئے حکومت نے قانون تحفظ ماحولیات 1997ء پاس کیا تھا تاکہ صوبے کے مکین آلودگی سے پاک سانس لینے کے قابل ہو سکیں اور انہیں پینے کے صاف پانی بھی میسر آ سکے لیکن بدقسمتی سے انوائرنمنٹس پروٹیکشن ایکٹ 1997ء کی مسلسل کھلم کھلا خلاف ورزی زور شور سے جاری ہے لاہور میں جتنی بھی فیکٹریاں ٗ انڈسٹریاں ہیں ان سب کا ویسٹ اور تمام گندے نالوں کا پانی دریائے راوی میں ڈالا جا رہا ہے جس سے زیر زمین پانی بھی بہت زیادہ آلودہ ہو ا ہے اسی طرح خاص طور پر تمام بڑے شہروں میں جتنی بھی فیکٹریاں ٗ انڈسٹریاں ملز ہیں ان سب کا ویسٹ اور گندے پانی سے زیر زمین پانی زہر آلود ہو چکا ہے جس سے پنجاب بھر میں طرح طرح کی بیماریاں پھیل رہی ہیں اور ان میں بعض تولا علاج امراض ہیں جس سے بے شمار لوگ اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں اور ہیپاٹائٹس جیسی بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں بعض شہروں میں تو انسانوں کے ساتھ ساتھ جانور بھی مختلف بیماریوں کی وجہ سے ہلاک ہو چکے ہیں لیکن آج تک اس معاملے کے حل اور تدارک کیلئے کوئی خاطر خواہ بندوبست نہیں کیا گیا بلکہ اس کے تدارک کیلئے جو انوائرنمنٹس پروٹیکشن ایکٹ 1997ء پاس ہواتھا اس پر بھی عملدرآمد نہیں ہو رہا اگر اس پر عمل درآمد ہوتا تو آج یہ صورتحال نہ ہوتی اور نہ ہی جانی ٗ مالی نقصان ہوتا متعلقہ اداروں کی طرف سے انوائرنمنٹس پروٹیکشن ایکٹ 1997ء پر عمل درآمد نہ ہونے کی وجہ سے پنجاب بھر کی عوام میں شدید بے چینی اور اضطراب پایا جاتا ہے۔