مسافروں نے رحمان ملک اور ن لیگ کے ایم این اے کو طیارے سے اتار دیا

مسافروں نے رحمان ملک اور ن لیگ کے ایم این اے کو طیارے سے اتار دیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                           کراچی (مانٹیرنگ ڈیسک،خصوصی رپورٹ)قومی ائیرلائن کی کراچی سے اسلام آباد جانے والی پرواز مسلم لیگ ن کے ایم این اے ڈاکٹر رمیش کمار اور سابق وزیر داخلہ رحمان ملک کی وجہ سے تاخیرکا شکار ہوگئی جس پر مسافروں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے دونوں کو طیارے سے نیچے اترنے پر مجبور کر دیا۔ پی آئی اے کی پرواز پی کے تھری سیون زیرو کوشام سات بجے کراچی سے اسلام آباد روانہ ہونا تھا لیکن پرواز دو گھنٹے تاخیر سے روانہ ہوئی۔ تاخیر کی وجہ سابق وزیر داخلہ رحمان ملک اور نواز لیگ کے رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر رمیش تھے۔ دو گھنٹے لیٹ پہنچے۔ ڈاکٹر رمیش طیارے میں پہنچے تو مسافروں نے ان کی خوب خبر لی ، تاخیر پر احتجاج کیا اور انہیں طیارے سے نیچے اترنے پر مجبور کر دیا۔ رحمان ملک پہنچے تو انہیں بھی مسافروں کے غصے کا سامنا کرنا پڑا۔ رحمان ملک نے مسافروں کا اشتعال دیکھ کر واپس جانے میں عافیت سمجھی۔ رحمان ملک کا کہنا تھا کہ تاخیرا±ن کی وجہ سے نہیں ہوئی ، اس کی تحقیقات کرائی جائےپی آئی اے کی پرواز پی کے 370کے سینئر شفٹ مینجرندیم ابرو اور ٹرمینل مینجر شہزاد علی کو معطل کر دیا گیاہے۔ وزیر اعظم کے مشیر شجاعت عظیم نے کہا ہے کہ وی آئی پی کلچر کو برداشت نہیں کیا جائیگا،گذشتہ روزکراچی سے اسلام آباد جانیوالی قومی ائر لائن کی پرواز اڑھائی گھنٹے تاخیر کا شکار ہو گئی تھی جس پر مسلم لیگ ن کے ر کن قومی اسمبلی رمیش کمار اور پیپلز پارٹی کے رہنما رحمن ملک کی آمد پر مسافروںنے شدید احتجاج کیا تھا۔

مزید :

صفحہ اول -