وی آئی پی کلچر پر تعجب ہے، ادارے صحیح کام کریں تو عوام کو ایسا نہ کرنا پڑے: جواد ایس خواجہ

وی آئی پی کلچر پر تعجب ہے، ادارے صحیح کام کریں تو عوام کو ایسا نہ کرنا پڑے: ...
وی آئی پی کلچر پر تعجب ہے، ادارے صحیح کام کریں تو عوام کو ایسا نہ کرنا پڑے: جواد ایس خواجہ
کیپشن: Justice jawad s khawaja

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ کے جج جسٹس جواد ایس خواجہ نے وی آئی پی کلچر پر تعجب کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ جہاز کا دروازہ بند بھی ہو جائے تو چاہے صدر بھی آئے دروازہ بند رہنا چاہئے۔ سپریم کورٹ میں سانگھڑ آلودگی کیس کی سماعت کے دوران جسٹس جواد ایس خواجہ نے ریمارکس دیئے کہ وی آئی پی کلچر پر تعجب ہے، ہر آدمی وی آئی پی بنا ہوا ہے ویڈیو دیکھ کر اطمینان بھی ہوا اور بے اطمینانی بھی ہوئی اور یہی ایک مسئلہ ہے کہ مسافروں کو قانون نافذ کرنے کی ضرورت کیوں پیش آئی۔ انہوں نے کہا کہ ادارے صحیح کام کریں تو عوام کو یہ کام نہ کرنا پڑے، عرصے سے جہاز سے سفر کر رہا ہوں، آج تک دیر نہیں ہوئی۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -