جمعے کو عوام کا سمندر دھرنے میں آئے گا، اتوار کو کراچی جا رہوں ، اسلام آباد ہائیکورٹ نے ہمارے حق میں فیصلہ دیا: عمران خان

جمعے کو عوام کا سمندر دھرنے میں آئے گا، اتوار کو کراچی جا رہوں ، اسلام آباد ...
جمعے کو عوام کا سمندر دھرنے میں آئے گا، اتوار کو کراچی جا رہوں ، اسلام آباد ہائیکورٹ نے ہمارے حق میں فیصلہ دیا: عمران خان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ ملک کے عوام جاگ چکے ہیں، انہیں سب سمجھ آ گئی ہے کہ کونسا سرکاری ملازم ، وکیل یا صحافی کس طرف ہے، سب چور مل چکے ہیں اور اس کا مجھے فائدہ ہے کہ قوم ان کو پہچان رہی ہے، اتوار کے روز کراچی جا رہا ہوں، جمعے کے روز دھرنے میں عوام کا سیلاب آئے گا اور نواز شریف کا استعفیٰ مانگے گا، مطالبات کی منظور تک یہیں موجود رہیں گے۔
ڈی چوک میں جاری آزادی مارچ کے دھرنے سے خطاب میں عمران خان نے کہا کہ میںنے فیصلہ کر لیا ہے اور عوام نے بھی ظلم کی زنجیر توڑ دی ہے، کوئی غلط فہمی میں نہ رہے کہ ہم یہاں سے چلے جائیں گے،عوام چلے بھی جائیں تو یہیں رہوں گا اور استعفے تک کنٹینر میں رہوں گا، جب تک زندہ ہوں اس مشن کو جاری رکھوں گا۔ ہمیں پولیس تشدد سے خوف زدہ نہیں کیا جا سکتا، ہمارے5 ہزار کارکنوں کو جیل میں نظر بند رکھا گیا ہے، ان پر کوئی مقدمہ نہیں، اسلام آباد ہائیکورٹ نے آئی جی اسلام آباد طاہر عالم کے احکامات کے خلاف فیصلہ دیا ہے، سچ کی فتح ہو چکی ہے۔انہوں نے کہا کہ مجھے معلوم ہے کہ نواز شریف اپنی دولت بچانے کے لئے کرسی نہیں چھوڑیں گے کیونکہ وہ سوچتے ہیں کہ اگر میں چلا گیا تو میرے لوٹے ہوئے پیسے کا کیا بنے گا؟ لیکن جمعے کے روز یہاں عوام کا سمندر ہو گااور ہم سب یہاں اپنے بجلی کے بل جلائیں گے، لوگ میرے لئے نہیں اپنے حقوق لینے اور اس ظلم کے خلاف آواز بلند کرنے کےلئے نکلیں گےاور نواز شریف سے استعفے کا مطالبہ کریں گے۔ ہمارا یہ حق ہے کہ ہم حکومت سے سوال کریں کہ بجلی کی قیمتوں میں 80فیصد اضافہ کس وجہ سے کیا گیا؟چیئرمین تحریک انصاف نے الزام عائد کیا کہ وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف کا بیٹا 7ارب روپے کا پاور پلانٹ لگانے جا رہا ہے، گزشتہ پانچ سالوں میں پنجاب میں 20ہزار جرائم ہوئے اور ریپ کے کیسوں میں 80فیصد اضافہ ہو گیا ہے۔ سینیٹر نعیمہ نے پارلیمنٹ میں دھاندلی پر ہمارے موقف کی تائید کر دی ہے ، ویسے تو پارلیمنٹ میں تقاریر میں سب نے کہا کہ دھاندلی ہو ئی ہے مگر نواز شریف کے استعفے پر تیار نہیں ہیں، کیونکہ ان کو ڈر ہے کہ سب کی دوکانداری بند ہو جائے گی، لیکن میں یہ چاہتا ہوں کہ یہ سی طرح ملے رہیں تاکہ پاکستانی ان سب کو پہچان جائیں۔ کپتان نے کہا کہ حکمرانوں نے پولیس کا محکمہ تباہ کر دیا ہے،ان کو وی آئی پی پروٹوکول کی ڈیوٹیاں دے دی گئی ہیں اور سیاسی کارکنوں پر تشدد کے لئے استعمال کیا جا رہا ہے،مجھے نواز شریف اور گلوبٹ آئی جی پر بہت غصہ ہے،ان سب کا احتساب کریں گے اور ان کو جیل میں بھیجیں گے۔ عمران خان نے اعلان کیا کہ کراچی والے تیار ہو جائیں، اتوارکے روز کراچی جا رہا ہوں، وہاں احتجاجی جلسے خطاب کر کے کراچی کے بہادر کارکنوں کا شکریہ ادا کروں گا اور پھر واپس آ کر رات کو دھرنے میں بھی شرکت کروں گا۔انہوں نے ایک بارپھر سرکاری ملازمین، پولیس اور سول سوسائٹی سے بھی درخواست کی کہ وہ اس حکومت کے خلاف باہر آئیں اور آزادی مارچ کا ساتھ دیں۔

مزید :

قومی -Headlines -