مشرف حملہ کیس میں ملوث ملزم کو سزا مکمل ہونے کے باوجود رہا نہ کرنے پر آئی جی جیل خانہ جات کو نوٹس

مشرف حملہ کیس میں ملوث ملزم کو سزا مکمل ہونے کے باوجود رہا نہ کرنے پر آئی جی ...

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ نے مشرف حملہ کیس میں ملوث ملزم کو سزا مکمل ہونے کے باوجود رہا نہ کرنے پر توہین عدالت کی درخواست پر آئی جی جیل خانہ جات میاں فاروق نذیر کو نوٹس جاری کر دیا ہے۔جسٹس شاہد حمید ڈار نے مجرم عدنان خان کی والدہ سائرہ خان کی توہین عدالت کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کی طرف سے مجاہد وسیم چودھری ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ2003ء میں ٹرائل کورٹ نے عدنان خان کو سابق آرمی چیف پرویز مشرف پر حملہ کرنے کے الزام میں 15سال قید کی سزا سنائی تھی، عدنان خان قانون کے مطابق سزا میں رعایتیں ملنے کے بعد اپنی سزا مکمل کر چکا ہے لیکن اسے رہا نہیں کیا جا رہا ہے، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ لاہور ہائیکورٹ نے بھی عدنان خان کی سزا کے ازسرنو تعین اور اس کی رہائی کی نئی تاریخ دینے کا حکم دیا تھا لیکن عدالتی حکم پر عملدرآمد نہیں کیا جا رہا، انہوں نے استدعا کی کہ عدنان خان کی سزا کے ازسرنو تعین کرنے کے بعد اسے رہا کرنے کاحکم دیا جائے اور حکم عدولی پر آئی جی جیل خانہ جات میاں فاروق نذیر کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے، عدالت نے آئی جی جیل خانہ جات کو نوٹس جاری کرتے ہوئے دو ہفتوں میں جواب طلب کر لیاہے۔

مزید :

صفحہ آخر -