سکیورٹی فورسز نے افغانستان سے آنیوالی گاڑیاں روک لیں،داخلہ بند

سکیورٹی فورسز نے افغانستان سے آنیوالی گاڑیاں روک لیں،داخلہ بند

  

لنڈی کوتل( صباح نیوز)پاکستان سیکیورٹی فورسز نے افغانستان سے آنے والی گاڑیوں کو پاکستان میں داخل ہونے سے روک لیا۔ڈرائیوروں اور کنڈیکٹر ز کو قانونی سفری دستاویزات نہ رکھنے کی صورت میں پاکستان میں داخل نہیں ہونے دیا جائے گا پاکستانی حکام۔پاکستانی حکام اور ٹرانسپورٹروں کی کامیاب مذاکرات کے بعد ڈیڈ لائن میں 30ستمبر تک توسیع کی گئی۔سرکاری ذرائع کے مطابق پاکستانی فورسز نے جمعے کو افغان گاریوں کو پاکستان میں داخل ہونے روک لیا ۔ایک ماہ پہلے پاکستانی حکام نے افغان ڈرائیوروں اور کنڈیکٹروں کے لئے ویزا لازمی قرار دیا تھا اور ان کو واضح کردیا تھا کہ 15ستمبر کے بعد کسی بھی افغانی ڈرائیور اور کنڈیکٹر کو بغیر سفری دستاویزات کے پاکستان میں داخل نہیں ہونے دیا جائے گا آج جمعے کو پاکستانی فورسز نے فیصلے پر عمل درامد شروع کی اور افغان ٹرانسپورٹروں کو بغیر سفری دستاویزات کے پاکستان میں داخل ہونے سے روک لیا بعد میں افغان ٹرانسپورٹ یونین کے صدرہاشم خان اور پاکستان ٹرانسپورٹ یونین کے صدر عظیم اللہ نے پاکستانی بارڈر حکام کے ساتھ کامیاب مزاکرات کئے اور اس مہلت میں 30ستمبر تک توسیع کی گئی ۔جس کے بعد ایک گھنٹے کی بندش کے بعد افغان گاڑیاں پاکستان میں داخل ہوگئی واضح رہے کہ پاکستان نے یکم جولائی سے طورخم بارڈر پر پاکستان میں داخل ہونے والے تمام افراد کے لئے ویزا لازمی قرار دیا ہے جس کے بعد افغان اور پاکستان حکومتوں کے درمیان تعلقات میں تناو پیدا ہوا ہے۔اور پورے لنڈی کوتل میں ہزاروں لوگ بے روزگار ہوگئے ۔

مزید :

صفحہ آخر -