بجلی کا بحران نومبر 2017ء میں مکمل ختم ہوجائیگا: اسحاق ڈار

بجلی کا بحران نومبر 2017ء میں مکمل ختم ہوجائیگا: اسحاق ڈار

  

پیرس (این این آئی) وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ پاکستان سے بجلی کا بحران نومبر2017 ء میں مکمل طور پر ختم ہو جائیگا ٗ 2019 ء میں 10 ہزار میگا واٹ بجلی کی پیداوار میں اضافہ ہو گا ٗپاکستان نے اقتصادی و معاشی بحران پر قابو پا لیا ہے ٗ پاکستان سے ٹیکس چوری کے سدباب کیلئے موثر اقدامات اٹھائے گئے ہیں ٗپاکستان 16 ستمبر سے ٹیکس سے امور سے متعلق او ای سی ڈی کا ممبر بن گیا ہے ٗ فرانس کیساتھ اقتصادی و تجارتی تعلقات کو فروغ دینے ، دو طرفہ تعلقات بڑھانے کے حوالے سے بات چیت ہوئی ہے ٗ فرانس پاکستان میں توانائی اور آٹو انڈسٹری کے شعبہ جاتا میں سرمایہ کاری کریگا وزیراعظم نواز شریف کی قیادت میں ملک ترقی کی راہ پر گامزن ہے پاکستان اور فرانس کی مشترکہ اقتصادی کمیٹی وزارتی سطح پر قائم کر کے دو طرفہ تجارتی حجم ایک ارب ڈالر سے بڑھایا جائیگا ٗاوورسیز پاکستانیوں کے مسائل کے حل کیلئے ہر ممکن اقدامات کر رہے ہیں ایئر پورٹس پر جدید آلات نصب کئے جائیں گے۔جمعہ کو وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے فرانس کے 5 روزہ دورہ کے اختتام پر پاکستانی سفارتخانہ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اپنے دورے کے حوالے سے ذرائع ابلاغ کو آگاہ کیا اس موقع پر چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ ڈاکٹر مفتاح اسماعیل ، پاکستان کے سفیر معین الحق بھی انکے ہمراہ تھے ۔ وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے بتایا کہ پیر سے جمعہ تک فرانس میں قیام کے دوران فرانس کے وزیر خارجہ ، وزیر خزانہ ، فرانس کے تجارتی نمائندوں اور چیمبر آف کامرس ، پاکستانی کمیونٹی کے نمائندوں سے ملاقاتیں کی ہیں ٗ وزیر خزانہ نے او ای سی ڈی کا ممبر بننے کیلئے فنانس بل 15,16 کی سیکشن 107 میں ترمیم کی اور 16 ستمبر سے پاکستان دستخط کر کے 80 ممالک میں شامل ہو گیا ہے اس سے پاکستان یورپی ممالک میں تمام ممبر ممالک کے ساتھ ٹیکس کی اطلاعات شیئرز ہوسکیں گی ۔ انہوں نے کہا کہ 2017 کے آخر تک آپریشنل ہو گا انہوں نے کہا کہ اسکا آغاز برطانیہ سے ہو گا ۔ اسی طرح سوئٹزرلینڈ سے بات چیت چل رہی ہے ۔ وزیر خزانہ نے بتایا کہ فرانس کے فنانس منسٹر کے ساتھ بھی مفید بات چیت ہوئی ۔ ایک ارب ڈالر کا دو طرفہ تجارتی حجم بڑھانے پر غوروخوض کیا گیا سیکرٹری سطح پر قائم دونوں ممالک کی اقتصادی کمیٹی کو وزارتی سطح پر لانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ وزیر خزانہ نے بتایا کہ مقبوضہ کشمیر میں ہونیوالے انسانی حقوق کی پامالی کے حوالے سے انہیں آگاہ کیا گیا ۔ پاکستان فرانس میں ہونیوالے دہشتگردی کی بھر پور مذمت کرتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ فرانس کے وزیر خارجہ کو پاکستان میں ہونیوالی دہشتگردی کے بارے میں بھی آگاہ کیا گیا 60 ہزار پاکستانی جانیں قربان ہوئی ہیں معاشی و اقتصادی طور پر کھربوں روپے کا نقصان اٹھانا پڑا ہے ۔ایک سوال کے جواب میں وزیر خزانہ نے بتایا کہ اگلے سال جون تک لوڈشیڈنگ کم ہو کر 3 گھنٹے رہ جائیگی جبکہ نومبر 2017 میں لوڈشیڈنگ کا مکمل خاتمہ ہو جائیگا ٗ 2018 تک 10 ہزار میگا واٹ بجلی کی پیداوار ہو جائیگی 2018 تک 10 ہزار میگا واٹ بجلی کی پیداوار کا اضافہ ہو گا ۔

مزید :

صفحہ آخر -