عمران فاروق قتل کیس،ٹرائل کورٹ کا شواہد پیش کرنے کی مہلت نہ دینے کا فیصلہ کالعدم قرار

عمران فاروق قتل کیس،ٹرائل کورٹ کا شواہد پیش کرنے کی مہلت نہ دینے کا فیصلہ ...
عمران فاروق قتل کیس،ٹرائل کورٹ کا شواہد پیش کرنے کی مہلت نہ دینے کا فیصلہ کالعدم قرار

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نے عمران فاروق قتل کیس میں شواہد پیش کرنے کی مہلت نہ دینے کا ٹرائل کورٹ کافیصلہ کالعدم قرار دیدیا،عدالت نے حکم دیا ہے کہ شواہد آنے کے 2 ماہ میں ٹرائل مکمل کیا جائے۔تفصیلات کے مطابق ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے اسلام آبادہائیکورٹ ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس سے متعلق ٹرائل کورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دینے کی درخواست کی،ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے برطانوی سینٹرل اتھارٹی کی منظوری کا لیٹر اسلام آبادہائیکورٹ میں پیش کردیا،ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ برطانیہ کی سینٹرل اتھارٹی نے پاکستان کی درخواست منظور کرلی ہے، اورپاکستان کو شواہد دینے کیلئے رضا ہو گیاہے ،عدالت سے استدعا ہے کہ ٹرائل کورٹ کامزید شواہد جمع کرانے کیلئے مہلت نہ دینے کا فیصلہ کالعدم قرار دیاجائے،عدالت نے عمران فاروق قتل کیس میں شواہد پیش کرنے کی مہلت نہ دینے کا ٹرائل کوٹ کا فیصلہ کالعدم قراردیدیا،عدالت نے کہا ہے کہ شواہد آنے کے 2 ماہ میں ٹرائل مکمل کیا جائے ۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد


loading...