ایبٹ آباد،طویل بندش کے بعد تعلیمی ادارے کھل گئے،افسران کے دورے 

ایبٹ آباد،طویل بندش کے بعد تعلیمی ادارے کھل گئے،افسران کے دورے 

  

 پشاور(سٹاف رپورٹر)کورو نا کی وجہ سے گزشتہ6 سے ماہ کی بندش کے بعد ملک کے دیگر حصو ں کی طرح ضلع ایبٹ آباد میں بھی نوین،دسویں،گیاویں اوربارویں جماعت تک سکولوں میں تعلیمی سرگرمیوں کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ڈپٹی کمشنر ایبٹ آبادمحمد مغیث ثنا ء اللہ کی ہدایات پر ضلعی انتظامیہ کے افسران اور محکمہ تعلیم کے افسرا ن کامختلف سرکاری ونجی سکولوں کا دورہ اور احتیا طی تدابیرپر عمل درآمد کا جائزہ۔صوبائی حکومت کی جانب سے سکولوں کی بندش کے خاتمے کے بعد ڈپٹی کمشنر ایبٹ آباد محمد مغیث ثناء اللہ کی ہدایات پر محکمہ تعلیم ایبٹ آباد کی جانب سے سرکاری سکولوں کی صفائی اور کورونا سے بچاو کے لیے ایس او پیز پر عمل درآمد کا آغاز کر دیا گیا۔ بچوں کی آمد سے پہلے ہی تمام سکولوں میں صفائی کو یقینی بنایا گیا۔ اس کے علاوہ سکولوں میں داخلے کے لیے فیس ماسک ضروری قرار دیا گیا ہے اور سکولوں کے داخلی راستوں پر ہیٹ گن کے زریعے ٹمپریچر بھی چیک کیا جا رہا ہے۔ اس سلسلے میں اسسٹنٹ کمشنر ایبٹ آباد ڈاکٹر مجتبی بھروانہ نے گورنمنٹ ہائی سکول نمبرایک،دو،تین اور بیکن ہاوس سکول ایبٹ آباد کا دورہ کیا۔ انہوں نے طلبہ کے لیے موجود سہولیات کا جائزہ لیا متعلقہ سکول انتظامیہ کو ضروری ہدایات جاری کیں۔ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنرعکاشہ کرن نے تحصیل حویلیاں میں دار ارقم سکول، جناح پبلک سکول، Educators اور پاکستان سٹی پبلک سکول کا دورہ کیا۔ انہوں نے طلبہ کے لیے موجود سہولیات کا جائزہ لیا اورسکول انتظامیہ کو حکومتی ایس او پیز کے مطابق تعلیمی سرگرمیوں کو جاری رکھنے سے متعلق ضروری ہدایات جاری کیں۔ضلعی انتظامیہ کورونا سے بچاو کے لیے ہرممکن اقدامات اٹھا رہی ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ ڈسٹرکٹ ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے تعاون سے تمام سکولوں کے پرنسپلز کو ہدایات اور آگاہی فراہم کی گئی ہے۔ سکولوں کے کھلنے سے پہلے ہی تمام تر صفائی اور جراثیم کش اسپرے کا کام مکمل کیا گیا ہے۔ طلبہ اور اساتذہ کے سکول میں داخلے کے وقت تھرمل گن  کے زریعے درجہ حرارت ماپا جاتا ہے اور ساتھ ہی ساتھ ہینڈ سینیٹائزر کے زریعے ہاتھوں کوجراثیم سے پاک کیا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ طلبہ اور اساتذہ کی آگاہی کے لیے فرش پر فاصلے کے نشانات اور ایس او پیز کے بینرز بھی آویزاں کیے گئے ہیں۔تمام طلبہ اور والدین سے گزارش ہے کہ کورونا سے بچاو کے لیے ایس او پیز پر عمل درآمد کو یقینی بنائیں اوراحتیاطی تدابیر اختیار کریں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -