چیئرمین نیب کے اختیارات  کیخلاف دائردرخواستوں کی  سماعت4 ہفتوں تک ملتوی

  چیئرمین نیب کے اختیارات  کیخلاف دائردرخواستوں کی  سماعت4 ہفتوں تک ملتوی

  

 لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس شاہد محمود عباسی پرمشتمل ڈویژن بنچ نے چودھری برادران کی چیئرمین نیب کے اختیارات کے خلاف دائردرخواستوں کی سماعت4 ہفتوں تک ملتوی کردی،کیس کی سماعت شروع ہوئی تو نیب کے پراسیکیوٹر نے عدالت کوبتایا کہ چودھری پرویز الہٰی کے خلاف غیر قانونی تعیناتیوں کا ریفرنس چیئرمین نیب کو بھجوا دیا ہے، آمدنی سے زائد اثاثہ جات انکوائری حتمی مراحل میں ہے،فاضل بنچ نے استفسار کیا کہ آپ کوریفرنس فائل کرنے کے لئے کتنا وقت درکار ہوگا؟جس پر نیب کے وکیل نے کہا کہ ہمیں 6 ہفتوں کا وقت دیا جائے، عدالت نے مذکورہ بالاحکم جاری کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت آئندہ تاریخ پیشی تک ملتوی کردی،چودھری برادران نے اپنی درخواست میں چیئرمین نیب کے اختیارات اورنیب کی تین انکوائریز کو چیلنج کر رکھا ہے،درخواست گزاروں کا موقف ہے کہ نیب سیاسی انجینئرنگ کرنے والاادارہ  ہے، نیب کے کردار اور تحقیقات کے غلط انداز پر عدالتیں فیصلے بھی دے چکی ہیں، چیئرمین نیب نے 20  سال پرانے معاملے کی دوبارہ تحقیقات کا حکم دیا ہے، نیب نے 20 سال قبل آمدنی سے زائد اثاثہ جات کی مکمل تحقیقات کیں مگر ناکام ہوا، چیئرمین نیب کو 20 سال پرانی اور بند کی جانے والی انکوائری دوبارہ کھولنے کا اختیار نہیں۔

سماعت ملتوی 

مزید :

صفحہ آخر -